Wednesday , December 12 2018

روہنگیا مسلمانوں پر ظلم و جبرکی رپورٹنگ کرنے والے 2 صحافی عدالت میں پیش

ینگون۔ 10 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) رائٹرس سے وابستہ دو صحافیوں کو آج میانمار کی عدالت میں پیش کیا جائے گا جہاں ان پر رازداری کے ایک قانون کے مطابق فردِ جرم عائد کی جاسکتی ہے، جس کے بعد انہیں امکانی طور پر 14 سال کی سزائے قید دی جاسکتی ہے جبکہ دوسری طرف عالمی سطح پر ان کی رہائی کیلئے آوازیں اٹھائی جارہی ہیں۔ میانمار کے ہی شہری 31 سالہ والوں اور 27 سالہ کیاسو کو ایک ماہ قبل ینگون میں منعقدہ ایک ضیافت کے دوران دو پولیس اہلکاروں کی جانب سے دستاویزات وصول کئے جانے کے بعد گرفتار کیا گیا تھا۔ ان کی گرفتاری سامراجی دور حکومت کے خفیہ ایکٹ کے تحت عمل میں آئی تھی۔ ان پر الزام تھا کہ انہوں نے خفیہ دستاویزات دھوکہ سے حاصل کی تھیں۔ مذکورہ دونوں صحافیوں نے راکھین اسٹیٹ میں روہنگیا مسلمانوں پر کئے جانے والے ظلم و جبر کی رپورٹنگ کی تھی جس کی وجہ سے زائد از 6 لاکھ روہنگیا مسلمان بنگلہ دیش فرار ہوگئے تھے۔ اس تشدد کی اقوام متحدہ نے بھی سخت الفاظ کے ساتھ مذمت کرتے ہوئے اسے نسل کشی سے تعبیر کیا تھا اور تب سے لے کر اب تک روہنگیائی معاملہ میانمار کا انتہائی حساس معاملہ تصور کیا جاتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT