Saturday , May 26 2018
Home / دنیا / روہنگیا مسلمانوں پر میانمار کے حملے نسلی صفایا : امریکہ

روہنگیا مسلمانوں پر میانمار کے حملے نسلی صفایا : امریکہ

واشنگٹن ۔ 22 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) میانمار پر دباؤ میں اضافہ کرتے ہوئے امریکہ نے آج فیصلہ کیا کہ نسلی صفائے اور ملک کے روہنگیا مسلمانوں کے خلاف تشدد کو ہم معنی کارروائی قراردیا اور انتباہ دیاکہ ٹرمپ انتظامیہ ان پر جرمانے عائد کرے گا۔ 6 لاکھ سے زیادہ روہنگیا مسلمان میانمار کی ریاست راکھین سے نسلی تشدد سے گھبرا کر اور اپنی جان بچا کر پڑوسی ملک بنگلہ دیش فرار ہوگئے ہیں۔ اس طرح پوری دنیا میں پناہ گزینوںکا بحران پیدا ہوگیا تھا۔ امریکی ارکان مقننہ اور انسانی حقوق کی وکالت کرنے والوں نے وزیرخارجہ ریکس ٹلرسن سے مطالبہ کیا تھا کہ محکمہ خارجہ کی سفارشات پر کارروائی کی جائے اور میانمار میں روہنگیا مسلمانوں پر تشدد کی صورتحال کو نسلی صفایا قرار دیا جائے۔ تاہم سینئر انتظامی عہدیداروں نے وسیع تر تحدیدات میانمار پر عائد کرنے کے امکان کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں جمہوریت ابھی ابتدائی مرحلہ میں ہے۔ میانمار کو قبل ازیں برما کہا جاتا تھا اور اس نے حالیہ برسوں میں کئی دہائی کی فوجی حکمرانی کے بعد منتخبہ حکومت کو اقتدار سونپ دیا ہے حالانکہ فوج نے نمایاں طور پر اقتدار میں اپنا حصہ حاصل کیا ہے۔ سینئر انتظامی عہدیدار نے کہا کہ فی الحال کوئی انسانیت سوز جرم یا نسل کشی جاری نہیں ہے۔ اس لئے میانمار پرتحدیدات عائدنہیں کی جاسکتی۔

TOPPOPULARRECENT