Monday , December 18 2017
Home / دنیا / روہنگیا مسلمانوں کیلئے امدادی اشیاء لانے والوں پر بدھسٹوں کا حملہ

روہنگیا مسلمانوں کیلئے امدادی اشیاء لانے والوں پر بدھسٹوں کا حملہ

ینگون ۔ 21 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) پولیس نے بدھسٹوں کے ایک ہجوم کو منتشر کرنے کیلئے ہوائی فائرنگ کی کیونکہ انسانی بنیادوں پر روہنگیا مسلمانوں کے علاقوں کیلئے بھیجی جانے والی امداد کو انہوں نے روکنے کی کوشش کی تاکہ امدادی اشیاء ان تک نہ پہنچ سکے۔ یاد رہیکہ روہنگیا مسلمان ایک مخصوص علاقہ میں پناہ گزینوں کی زندگی گزرانے پر مجبور ہیں کیونکہ انہیں بے گھر کردیا گیا ہے۔ ہوائی فائرنگ میں کسی کے زخمی ہونے کی اطلاع نہیں ہے اور 8 افراد کے خلاف پولیس نے معاملہ درج کیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق روہنگیا مسلمانوں کے لئے امدادی اشیاء کے ٹرک کا تحفظ کرنے والے افسران پر تقریباً 300 افراد نے سنگ باری کی اور شیشے کی بوتلیں بھی ان کی جانب پھینکیں۔ امدادی اشیاء ریڈکراس کی انٹرنیشنل کمیٹی کی جانب سے روانہ کی گئی تھی جو راکھین اسٹیٹ میں روہنگیا مسلمانوں میں تقسیم کے لئے لائی گئی تھی جن میں پانی کی بوتلیں، بلانکٹس، مچھردانی، غذا اور دیگر اشیاء شامل ہیں۔ یہ تمام اشیاء کشتی کے ذریعہ یہاں لائی گئی ہیں جہاں گذشتہ ماہ تشدد پھوٹ پڑنے کے بعد روہنگیا مسلمان بے یار و مددگار اور کسی بھی نوعیت کی سہولت کے فقدان کے ساتھ اپنی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں جبکہ 421,000 روہنگیا مسلمان بنگلہ دیش فرار ہوچکے ہیں حالانکہ میانمار کی قائد آنگ سان سوچی نے جاریہ ہفتہ کے اوائل میں سفارتکاروں کو یہ تیقن دیا تھا کہ ضرورتمند افراد کو ہر بنیادی سہولت فراہم کی جائے گی جبکہ قبل ازیں اس علاقہ میں اقوام متحدہ کی جانب سے امدادی ایجنسیوں کی راہ میں حکومت نے رکاوٹیں پیدا کرنے کی کوشش کی تھی جبکہ راکھین کے بدھسٹوں نے بین الاقوامی امدادی گروپس پر الزام عائد کیا کہ ان کا روہنگیا مسلمانوں کی جانب ضرورت سے زیادہ جھکاؤ ہے۔

TOPPOPULARRECENT