Tuesday , November 21 2017
Home / Top Stories / روہنگیا پناہ گزینوں کو واپس لینے مائنمار پر ہندوستان کا دباؤ

روہنگیا پناہ گزینوں کو واپس لینے مائنمار پر ہندوستان کا دباؤ

بنگلہ دیش کا ادعا ۔ وزیر خارجہ ہند سشما سوراج کی وزیر اعظم شیخ حسینہ سے بات چیت
ڈھاکہ 15 ستمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) وزیر خارجہ سشما سوراج نے روہنگیا بحران پر بنگلہ دیش سے اظہار یگانگت کیا ہے اور کہا کہ ہندوستان مائنمار پر دباؤ ڈال رہا ہے کہ وہ ان پناہ گزینوں کو واپس اپنے ملک لے آئے جو اس بدھسٹ اکثریتی ملک سے فرار ہوگئے ہیں۔ بنگلہ دیش کے وزیر اعظم کے ایک قریبی معاون نے یہ بات بتائی ۔ زائد از 300,000 روہنگیائی مسلمان 25 اگسٹ سے مائنمار میں تشدد میں اضافہ کے بعد سے بنگلہ دیش آگئے ہیں علاوہ ازیں مزید تین لاکھ پناہ گزین پہلے سے بنگلہ دیش میں مقیم ہیں جو مائنمار کی سرحدات کے قریب بسے ہوئے ہیں۔ وزیر اعظم شیخ حسینہ کے نائب پریس سکریٹری نظر الاسلام نے بتایا کہ سشما سوراج نے ہماری وزیراعظم کو کل رات فون کیا اور مائنمار پناہ گزینوں کے مسئلہ پر بنگلہ دیش سے اظہار یگانگت کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سشما سوراج نے بنگلہ دیشی وزیر اعظم سے کہا کہ یہ بحران اب ایک بین الاقوامی مسئلہ بن گیا ہے اور ہندوستان مائنمار پر باہمی طور پر اور ہمہ جہتی فورمس کے ذریعہ یہ دباؤ ڈالنے کی کوشش کر رہا ہے کہ وہ نسلی اقلیت روہنگیائی مسلمانوں پر مظالم کا سلسلہ بند کرے اور ان پناہ گزینوں کو اپنے وطن واپس لے آئے جو یہاں سے فرار ہوگئے ہیں۔ ترجمان کے بموجب شیخ حسینہ نے بھی کہا کہ بنگلہ دیش انسانی بنیادوں پر ان پناہ گزینوں کو پناہ دینے پر مجبور ہے کیونکہ یہ لوگ مائنمار کے راکھین ریاست سے مظالم سے بچنے فرار ہوچکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شیخ حسینہ نے سشما سوراج کو پناہ گزینوں کی مشکلات اور ان کی بے یار و مددگار کیفیت سے واقف کروایا اور کہا کہ خاص طور پر چھوٹے بچے اور خواتین بری طرح متاثر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بنگلہ دیش کی جانب سے ان کی بنیادی ضروریات کی تکمیل کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔ شیخ حسینہ نے سشما سوراج سے کہا کہ بنگلہ دیش کو پناہ گزینوں کے مسئلہ سے نمٹنے کیلئے بیرونی مدد کی ضرورت ہے تاکہ ان کو مائنمار واپس بھی بھیجا جاسکے ۔ شیخ حسینہ نے کہا کہ بنگلہ دیش نے عارضی کیمپس کیلئے اراضی الاٹ کی ہے لیکن اگر یہ لوگ طویل وقت تک یہاں قیام کرتے ہیں تو اس سے بنگلہ دیش کو مشکلات پیش آئیں گی ۔ شیخ حسینہ کے ترجمان نے بتایا کہ جس وقت سشما سوراج نے فون کیا اس وقت ہندوستانی ہائی کمشنر برائے ڈھاکہ ہرش وردھن شرنگلا بھی شیخ حسینہ کی قیامگاہ پر موجود تھے ۔ کل ہی ہندوستان کی وزارت خارجہ نے کہا تھا کہ اس مسئلہ پر ہندوستان ‘ بنگلہ دیش کی ہر ممکن مدد کرے گا ۔

TOPPOPULARRECENT