Sunday , November 19 2017
Home / جرائم و حادثات / رپورٹرس کی جبری وصولی کا ریاکٹ بے نقاب

رپورٹرس کی جبری وصولی کا ریاکٹ بے نقاب

مقامی ٹی وی چیانلس و پورٹلس کے 7 نمائندوں کی گرفتاری
حیدرآباد۔ 27 نومبر (سیاست نیوز) ٹی وی رپورٹرس کی جانب سے  چلائی جارہی ایک جبری وصولی کے ایک اور ریاکٹ کو اوپل پولیس نے بے نقاب کردیا۔ اوپل پولیس نے دعویٰ کیا کہ مقامی ٹی وی چیانلس اور ویب پورٹلس سے وابستہ 7 نمائندے ، تجارتی اداروں کے ذمہ داروں سے اسٹنگ آپریشن کے نام پر جبری وصولی کررہے تھے۔ پولیس نے بتایا کہ 4 نومبر کو 32 سالہ این سوامی جو آن لائن پورٹل چلاتا ہے، اپنے دیگر ساتھی رپورٹرس 27 سالہ ایم سائی کمار، 37 سالہ پی نرسمہا مورتی، 27 سالہ پی جئے رام، 40 بی پربھاکر، 21 سالہ کے کمار سائی وشواناتھ اور 32 سالہ کے دیپتی کے ہمراہ کیرالا ایوش آیورویدک سنٹر پرشانت نگر واقع اوپل پہنچ کر اور تھراپی سنٹر کی ویڈیو گرافی کی اور یہ دھمکایا کہ تھراپی کے نام پر غیرقانونی طور پر مساج پارلر چلایا جارہا ہے اور ایک لاکھ روپئے جبراً وصول کرلئے۔ اسی طرح تین ماہ قبل مذکورہ رپورٹرس نے ونستھلی پورم میں واقع سری مائتری ایگرو ٹیکنالوجیز پرائیویٹ لمیٹیڈ کے دفتر پہنچ کر اسٹنگ آپریشن کے نام پر ذمہ داران سے 80 ہزار روپئے وصول کرلئے۔ ایک اور واقعہ میں جاریہ سال اگست میں اسکائی ڈیک کافی لاؤنج حقہ سنٹر واقع ایل بی نگر پہنچ کر اسٹنگ آپریشن کے بہانے 70 ہزار روپئے بٹور لئے۔ اوپل پولیس نے گرفتار رپورٹرس کے قبضہ سے ایک لاکھ 40 ہزار روپئے کی نقد روپئے، 6 موبائل فونس، ایک ہینڈی کیم کیمرہ اور شناختی کارڈس ضبط کرلئے۔

TOPPOPULARRECENT