Wednesday , December 12 2018

رکن اسمبلی ملکاجگری سیاست سے سبکدوش

مرکزی وزیر ایس ستیہ نارائنا پر قتل کی دھمکی دینے راجندر کا الزام

مرکزی وزیر ایس ستیہ نارائنا پر قتل کی دھمکی دینے راجندر کا الزام

حیدرآباد 3 اپریل ( این ایس ایس ) حیرت انگیز انکشاف کرتے ہوئے سابق کانگریس رکن اسمبلی اے راجندر نے ‘ جو کچ دن قبل ٹی آر ایس میں شامل ہوگئے تھے ‘ آج الزام عائد کیا کہ مرکزی وزیر سروے ستیہ نارائنا انہیں سنگین نتائج و عواقب کے علاوہ جان سے ماردینے کی دھمکی دے رہے ہیں اگر انہوں نے ان کی ہدایات پر عمل نہیں کیا ۔ راجندر نے کہا کہ چونکہ انہیں کچھ دن سے دھمکیاں مل رہی ہیں اس لئے سیاست سے سبکدوشی کا فیصلہ کرلیا ہے ۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے اے راجندر نے ایم آر پی ایس سربراہ مندا کرشنا مادیگا پر انہیں فون کرکے جان سے ماردینے کی دھمکیاں دینے کا الزام عائد کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ کمشنر سائبر آباد سے شکایت کرچکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مندا کرشنا مادیگا ‘ سروے ستیہ نارائنا کی ایما پر اس طرح کی دھمکیاں دے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس صورتحال میں ان کی والدہ اور ان کے افراد خاندان نے ان پر زور دیا کہ وہ اس طرح کی گندی سیاست سے کنارہ کشی اختیار کرلیں۔ اطلاعات کے مطابق سروے ستیہ نارائنا اس بار ملکاجری حلقہ اسمبلی سے مقابلہ کرنا چاہتے ہیںاور موجودہ رکن اسمبلی راجندر انہیں نقصان پہونچا سکتے ہیں۔ ایسے میں انہوں نے مندا کرشنا مادیگا کی خدمات حاصل کرکے ان کے سیاسی مستقبل کو بہتر بنانے میں مدد کی درخواست کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مندا کرشنا مادیگا نے فون کال کرکے ناشائستہ زبان استعمال کرنے کے علاوہ یہ دھمکی دی ہے کہ اگر وہ سروے ستیہ نارائنا سے تعاون نہ کریں تو انہیں ختم کردیا جائیگا ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ ان کے خیال میں اس سب کے پس پردہ مرکزی وزیر کارفرما ہیں۔ اس موقع پر وہ سیاست میں برقرار نہیں رہ سکتے ۔

TOPPOPULARRECENT