Thursday , June 21 2018
Home / اضلاع کی خبریں / رکن بلدیہ کاماریڈی کا اقدام خودکشی

رکن بلدیہ کاماریڈی کا اقدام خودکشی

متعلقہ وارڈ کیلئے بجٹ مختص کرنے میں لاپرواہی کے خلاف برہمی

کاماریڈی :20؍ مارچ ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) بجٹ کے مختص میں صدرنشین بلدیہ کے رویہ کے خلاف ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے رکن بلدیہ وارڈ نمبر 32 رام موہن نے بلدیہ کے اجلاس میں اپنے آپ پر کیروسین چھڑک کر خودکشی کرنے کی کوشش کی جس پر اجلاس میں موجودہ اراکین بلدیہ نے فوری کیروسین کھینچ کر ان پر پانی ڈالنا شروع کیا ۔ تفصیلات کے بموجب بلدیہ کاماریڈی کا ہنگامی اجلاس صدرنشین بلدیہ پیپری سشما کی صدارت میں منعقد ہوا۔ اجلاس کے آغاز کے ساتھ ہی رکن بلدیہ وارڈ نمبر 32 رام موہن نے وارڈ نمبر 32 کو فنڈس کے مختص میں صدرنشین بلدیہ لاپرواہی کرنے کا الزام عائد کیا ۔ وارڈ نمبر 32 کے 3 کروڑ روپئے کے ایل آر ایس کا ٹیکس ادا کیا گیا لیکن بجٹ کے مختص میں سب سے کم وارڈ نمبر 32 کو بجٹ مختص کیا گیا جس کی وجہ سے وارڈ کی ترقی ممکن نہیں ہورہی ہے صدرنشین بلدیہ سے اس بارے میں دریافت کرتے ہوئے اطمینان بخش جواب نہ ملنے پر رام موہن نے اپنے پاس موجودہ کیروسین چھڑک لینا شروع کیا اور خودکشی کرنے کی کوشش کی جس پر ان کے ساتھ بیٹھے ہوئے کرشنا موہن ، آنند و دیگر اراکین بلدیہ نے ان پر فوری پانی ڈال دیا اور اجلاس سے باہر لے کر آیا رام موہن کی اس حرکت کے بعد اجلاس میں افرا تفریح کا ماحول پیدا ہوگیا اور اجلاس کو ملتوی کردیا گیا ۔ صدرنشین بلدیہ سشما نے بتایا کہ وارڈ نمبر 32 کاماریڈی میں سب سے بڑا وارڈ ہے جس کی وجہ سے بجٹ بھی ہر سال مختص کیا جارہا ہے اگر کسی صورت میں کم پڑنے پر ان سے نمائندگی کی جاسکتی ہے لیکن اس طرح خودکشی کی دھمکی دینا سراسر غلط ہے اطلاع کے ملتے ہی پولیس یہاں پہنچ کر حالات کا جائزہ لیا اس واقعہ پر مسٹر رام موہن نے سخت ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ وارڈ نمبر 32 کاماریڈی کا سب سے بڑا وارڈ ہے اور اس کی ترقی کو یقینی بنانا میری ذمہ داری ہے لیکن صدرنشین بلدیہ فنڈس کے مختص میں لاپرواہی برتنے کی وجہ سے عوامی مخالفتوں کا سامنا کرنا پڑرہا ہے اور صدرنشین بلدیہ کے متعدد مرتبہ نمائندگی کے باوجود بھی نظر انداز کیا جارہا ہے جس پر مجبور ہوکر خودکشی کرنے کیلئے کوشش کی گئی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT