Friday , December 15 2017
Home / کھیل کی خبریں / رہانے اور جڈیجہ نے جنوبی افریقہ کو یقینی شکست کے دہانے پر پہونچادیا

رہانے اور جڈیجہ نے جنوبی افریقہ کو یقینی شکست کے دہانے پر پہونچادیا

اسٹار بیٹسمین کی سنچری ، بائیں ہاتھ کے اسپنر کو پانچ وکٹ ، ہندوستانی ٹیم کے 334 رنز کے جواب میں مہمان ٹیم 121 رنز پر آؤٹ

نئی دہلی ۔4 ڈسمبر ۔ ( سیاست ڈاٹ کام) جنوبی افریقہ کے خلاف چوتھے اور فائنل کرکٹ ٹسٹ میچ کے دوسرے دن اجنکیا رہانے کی شاندار سنچری اور رویندر جڈیجہ کے پانچ وکٹ کی مدد سے ہندوستانی ٹیم نے مہمان ٹیم پر 213 رن کی مستحکم سبقت کے ساتھ سارے کھیل پر اپنا کنٹرول مسلط کرلیا ۔ فیروز شاہ کوٹلہ گراؤنڈ پر کھیلے گئے اس میچ میں جڈیجہ نے طوفانی بولنگ کرتے ہوئے صرف 30 رن کے عوض پانچ وکٹ حاصل کرلیا اور بے بس مہمان ٹیم کو محض 49.3 اوورس میں 121 رنز پر ڈھیر کردیا۔ جنوبی افریقہ کی ٹیم دو مکمل سیشنس تک بھی نہیں کھیل سکی اور فالو آن سے بچنے کیلئے درکار 135 رنز بھی نہیں بناسکی جس کیلئے اس کو مزید 14 رنز درکار تھے ۔ اسپنر جڈیجہ نے اپنی تیر بہ ہدف جیسی بولنگ کے ذریعہ خوب تباہی مچائی ۔ اومیش یادو (2/32) اور ایشانت شرما (1/28) نے بھی کافی متاثر کن اور سحرانگیز بولنگ کی ۔ بیٹنگ کے دوران 56 رنز بنانے والے روی چندرن اشوین 26 رنز دیکر دو وکٹ حاصل کئے ۔

اس اضافہ کے ساتھ اُنھیں محصلہ وکٹس کی مجموعی تعداد 26 تک پہونچ گئی ۔ رن بنانے کیلئے شاندار مواقع فراہم کرنے والی پچ کے باوجود جنوبی افریقہ کے بیٹسمین موقع کا فائدہ اُٹھانے میں ناکام ثابت ہوئے اور ہندوستای بولرس نے اس کی رہی سہی کسر بھی پوری کردی ۔ یہ دراصل ہندوستانی ٹیم کی انتہائی مستعد بولنگ اور جارحانہ بیٹنگ ہی تھی جس کے نتیجہ میں جنوبی افریقہ کی ٹیم یقینی پسپائی سے دوچار ہوگئی ۔ صرف اے بی ڈی ویلیرس ہی تھے جنھوں نے حالات کا ڈٹ کر مقابلہ کیا اور تنہا لڑائی جاری رکھتے ہوئے 42 رنز بنائے ۔ ڈی ویلیرس ہی وہ بیٹسمین تھے جو 9 ویں وکٹ کی حیثیت سے آؤٹ ہوئے ۔ اس کھیل کے ہنوز تین دن باقی ہیں اور ہندوستانی ٹیم اپنی حریف جنوبی افریقہ کو صفر کے مقابلے تین سے ریکارڈ شکست دینے کے موقف میں پہونچ گئی ہے ۔ دوسرے دن کے کھیل کی اہم خصوصیات میں رہانے کی سنچری ہے جنھوں نے 215 گیندوں کا سامنا کرتے ہوئے 127 رنز بنایا۔ اس طرح وہ دونوں ٹیموں کے ایسے واحد کھلاڑی بن گئے جنھوں نے تین ہندسوں پر مبنی اسکور بنایا ۔ منفرد انداز کے حامل دائیں ہاتھ سے کھیلنے والے بیٹسمین کے اسکور میں 11 چوکے اور پانچ چھکے شامل ہیں۔ آٹھویں وکٹ کی ساجھیداری میں روی چندرن اشوین (56) کے ساتھ رہانے 193 گیندوں کا سامنا کرتے ہوئے اپنی ٹیم کیلئے 98 رنز کا اضافہ کرسکے ۔ یہ بھی اتفاق ہے کہ رواں سیریز میں دونوں ٹیموں کے کھیل کے دوران یہ سب سے بڑی ساجھیداری بھی تھی ۔ رہانے ۔ اشوین جوڑی نے مرلی وجئے اور چتیشور پجارا کی جوڑی کی طرف سے بنائے گئے مشترکہ اسکور 86 رن کو بھی پیچھے چھوڑ دیا ۔ ایک اور اہم خصوصیت یہ بھی رہی کہ رہانے نے اپنے ہوم گراؤنڈ پر پہلی سنچری بھی بنائی اور یہ بھی پہلا موقع تھا کہ دونوں ٹیموں میں سے کوئی ٹیم 300 رنز کا اسکور عبور کرسکی جبکہ اس سیریز میں اب تک کا بڑا اسکور 215 رن تھا جو ناگپور میں بنائے گئے تھے ۔

TOPPOPULARRECENT