Monday , August 20 2018
Home / شہر کی خبریں / ریاستوں کو تحفظات فراہمی کا اختیار دینے پارلیمنٹ میں ٹی آر ایس ارکان کا احتجاج

ریاستوں کو تحفظات فراہمی کا اختیار دینے پارلیمنٹ میں ٹی آر ایس ارکان کا احتجاج

تلگو دیشم و دیگر جماعتوں کے ارکان کا بھی اپنے مطالبات کے حق میں احتجاج ، اجلاس پیر تک کے لیے ملتوی
حیدرآباد۔16 مارچ (سیاست نیوز) ٹی آر ایس ارکان پارلیمنٹ نے لوک سبھا میں آج بھی احتجاج جاری رکھا۔ تحفظات کی فراہمی کا اختیار ریاستوں کو دیئے جانے کا مطالبہ کرتے ہوئے ٹی آر ایس ارکان پلے کارڈس کے ساتھ اسپیکر سمترا مہاجن کے پوڈیم تک پہنچ گئے اور نعرے بازی کرنے لگے۔ جئے تلنگانہ کے نعروں کے ساتھ ٹی آر ایس ارکان نے کارروائی میں رکاوٹ پیدا کردی۔ ارکان کے ہاتھوں میں پلے کارڈس تھے جن پر تحفظات کے اختیارات ریاست کو دیئے جانے کا مطالبہ درج تھا۔ ٹی آر ایس کے علاوہ تلگودیشم اور دیگر جماعتوں کے ارکان نے بھی اپنے اپنے مطالبات کے حق میں احتجاج کیا جس پر اسپیکر نے ایوان کی کارروائی پیر تک کے لیے ملتوی کردی۔ ٹی آر ایس کے ارکان نے بعد میں پارلیمنٹ کے احاطہ میں دھرنا منظم کیا اور مرکز سے مانگ کی کہ وہ دستوری ترمیم کے ذریعہ تحفظات کی فراہمی کے اختیارات ریاستوں کو سونپ دے۔ ٹی آر ایس ارکان جتیندر ریڈی اور کویتا نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ تحفظات کے سلسلہ میں ملک بھر میں ایک قانون ہونا چاہئے۔ ملک جب ایک ہے تو قانون بھی تمام ریاستوں کے لیے ایک ہی ہو۔ انہوں نے کہا کہ ٹاملناڈو، مہاراشٹرا، راجستھان اور دیگر ریاستوں میں تحفظات 50 فیصد سے زائد ہیں لیکن مرکزی حکومت تلنگانہ میں تحفظات کو 50 فیصد سے زائد کیے جانے کی مخالفت کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آبادی کے اعتبار سے ٹی آر ایس حکومت نے مسلمانوں اور درج فہرست قبائل کے تحفظات میں اضافے کا بل اسمبلی میں منظور کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مرکز کو دستوری ترمیم کے ذریعہ اختیارات ریاستوں کے حوالے کرنا چاہئے تاکہ سماجی انصاف ہوسکے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT