Wednesday , December 13 2017
Home / شہر کی خبریں / ریاستی حکومت کی نئی حکمت عملی مسلمانوں کے لیے مشکوک

ریاستی حکومت کی نئی حکمت عملی مسلمانوں کے لیے مشکوک

مسلمانوں کو روزگار کی فراہمی کا وعدہ پورا نہیں ہوا ۔ مباحثہ سے معززین کا خطاب
حیدرآباد ۔ 18 ۔ اگست : ( پریس نوٹ ) : موومنٹ فار ایجوکیشن اینڈ اکنامک تلنگانہ نے میناریٹی رائٹس پروٹیکشن کمیٹی کے مشترکہ زیر اہتمام ایک مباحثہ بہ عنوان ’ تلنگانہ میں روزگار کے مواقع اور مسلم تحفظات ‘ ہوٹل کرسٹل بنجارہ ہلز میں منعقد کیا گیا ۔ اس مباحثہ کے انعقاد کا مقصد سرکاری مخلوعہ جائیدادوں پر مسلمانوں کے لیے مخلص روایتی سابقہ پالیسی کے تحت 4 فیصد تحفظات کی عمل آوری کو یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ تلنگانہ سرکار ( ٹی آر ایس ) کے منشور 12 فیصد مسلم تحفظات کی جانب پیش قدمی کے لیے کوششوں کو تیز کرنا تھا ۔ مسلم رائٹس پروٹیکشن کمیٹی کے صدر نشین پروفیسر انصاری نے افتتاحیہ خطبہ دیتے ہوئے کہا کہ ریاستی حکومت کی نئی حکمت عملی مسلمانوں کے لیے مشکوک بن گئی ہے ۔ کیوں کہ جہاں خواتین کو روزگار کی ضمانت کے لیے واضح پالیسی کا اظہار کیا گیا ہے وہیں مسلم بیروزگاروں کو روزگار فراہم کرنے کے اپنے وعدہ کو واضح نہیں کیا گیا ۔ اس کے لیے قانونی اور جمہوری جدوجہد کے ساتھ ساتھ سماجی بیداری وقت کی اہم ضرورت ہے ۔ تلنگانہ حکومت اگر 4 فیصد تحفظات پر عمل آوری کرتی ہے تو اس سے 12 فیصد تحفظات کے وعدہ پر اعتبار کیا جاسکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مسلمانوں کو مذہب کے نام پر تحفظات نہیں چاہئے بلکہ معاشی سماجی سروے کی بنیادوں پر پسماندہ قرار دی گئی قوم کے نقطہ نظر سے تحفظات لازم ہیں ۔ موومنٹ فار ایجوکیشن اینڈ اکنامک تلنگانہ کے جنرل سکریٹری سید حمید الدین نے کہا کہ تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن کی جانب سے 4 فیصد تحفظات پر عمل آوری کی بات کی جارہی ہے لیکن وزارت داخلہ کے تحت پولیس نظم و نسق میں مخلوعہ جائیدادوں پر مسلم تحفظات کی عمل آوری پر متضاد رائے سامنے آرہی ہیں ۔ اس ضمن میں مشترکہ طور پر پولیس میں بھرتی کے خواہش مند نوجوانوں کو ممکنہ تربیت سازی ، ذہن سازی کے لیے شعور بیداری کے ساتھ ساتھ فزیکل ، اسکل ٹریننگ کے مراکز کے قیام کو بھی قطعیت دی جارہی ہے ۔ اس ضمن میں اترپردیش کے سابقہ ڈائرکٹر جنرل پولیس جناب منظور احمد آئی پی ایس کی خدمات سے بھی استفادہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ اس ضمن میں ستمبر کے پہلے ہفتہ میں ایک اہم توسیعی لکچر پولیس نظم و نسق میں مسلمانوں کی شمولیت کے عنوان پر خطاب کرنے کے لیے جناب منظور احمد آئی پی ایس نے اپنی منظوری بھی دیدی ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT