Saturday , April 21 2018
Home / شہر کی خبریں / ریاستی وزرا کا شہر کے مختلف امور پر غور

ریاستی وزرا کا شہر کے مختلف امور پر غور

سرکاری اسکیمات کا جائزہ ۔ ناقص ایس ایس سی نتائج پر اظہار تشویش
حیدرآباد۔6فبروری(سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر الحاج محمد محمودعلی نے ریاستی وزیرداخلہ این نرسمہا ریڈی اور ریاستی وزیر ٹی سرینواس یادو کے ہمراہ اعلی عہدیداروں کے ساتھ شہر کے مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا۔ اس موقع پر وزراء نے حکومت کی تمام اسکیمات پر مؤثر عمل آوری کیلئے ہر ماہ باقاعدہ ڈسٹرکٹ ریویو کمیٹی کا اجلاس منعقد کرکے ترقیاتی کاموں کا جائزہ لینے کا عزم کیا۔ اس موقع پر شادی مبارک و کلیان لکشمی کے سی آر کٹ اسکیمات کے علاوہ تعلیم، آبرسانی و دیگر امور کی کارکردگی سے متعلق جائزہ لیا۔ جناب محمد محمودعلی نے کے سی آر کٹ اسکیم کو کامیاب بنانے میں تعاون کیلئے تمام ضلع کلکٹرس کی ستائش کی اور ہر ماہ ایک ہفتہ اس کے متعلق عوام میں شعور بیداری مہم چلانے کا مشورہ دیا اور تیقن دیا کہ تمام ریاستی وزراء اس مہم میں شرکت کریں گے۔ کلیان لکشمی و شادی مبارک اسکیمات کے تحت درخواستوں کی جلد یکسوئی کرنے اور جلد چیکس کی تقسیم عمل میں لانے کی ہدایت دی ۔ ریاست میں دسویں جماعت کے خاطر خواہ نتائج برآمد نہ ہونے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے وزراء نے محکمہ تعلیم سے متعلقہ عہدیدارو ں سے تعلیم کو مؤثر بنانے پر خاص توجہ مرکو ز کرنے اور وقتاً فوقتاً اسکولس کا معائنہ کرتے ہوئے تعلیمی کارکردگی کا جائزہ لینے کی ہدایت دی اور کہا کہ حکومت تلنگانہ تعلیم پر کروڑوں روپئے خرچ کررہی ہے اس کے باوجود تعلیمی شعبہ میں کمزوری باعث تشویش ہے ۔ محمد محمود علی نے سعیدآباد میں اپنے ایم ایل سی فنڈ سے تعمیر کئے جانے والے اسکول کی تعمیر کو بھی آئندہ تعلیمی سال سے قبل مکمل کرکے تعلیم کا آغاز کرنے احکامات جاری کئے ۔ نائب وزیر اعلی نے محکمہ ریوینیو کے عہدیداروں کو ناجائز قبضہ جات سے حاصل کی جانے والی سرکاری اراضیات کے تحفظ کو یقینی بنانے پر زور دیا اور کہا کہ ان اراضیات کے حصول میں کافی دشواریاں ہوئی ہیں محکمے کو چاہئے کہ وہ ان اراضیات کاتحفظ کریں۔ علاوہ ازیں وزیر مال نے جی او 59 کے تحت بقایا جات کو وصول کرنے وقت کا تعین کرتے ہوئے شہر کے مختلف علاقوں میں اس ضمن میں خاص مہم چلانے کی ہدایت دی ۔ محکمہ آبرسانی نے تفصیلات پیش کرتے ہوئے بتایا کہ جی ایچ ایم سی کے تحت محکمہ آبرسانی کی جانب سے شہر میں 410 ملین گیلن پینے کے پانی کی بلا ناغہ سربراہی جاری ہے ۔ نائب وزیر اعلی نے محکمہ آبرسانی کی کارکردگی کی ستائش کی مزید یگرامور کو ذمہ دارکنٹراکٹرس کو دیتے ہوئے وقت مقررہ پر تکمیل کرنے اور لاپرواہی کا مظاہرہ کرنے والے کنٹراکٹرس کے کنٹراکٹ کو منسوخ کرنے کی ہدایت دی ۔ اس اجلاس میں سکریٹری اقلیتی بہبود دانا کشور ، کلکٹر حیدرآباد یوگیتا رانا جوائنٹ کلکٹر کے علاوہ دیگر اعلی عہدیدار موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT