Friday , June 22 2018
Home / شہر کی خبریں / ریاست تلنگانہ اور آندھرا پردیش کو مرکزی حکومت کے یکساں مراعات

ریاست تلنگانہ اور آندھرا پردیش کو مرکزی حکومت کے یکساں مراعات

تلنگانہ کے عوام کو اندیشوں کا شکار نہ ہونے کا مشورہ ، ٹی آر ایس ایم پی ونود کمار

تلنگانہ کے عوام کو اندیشوں کا شکار نہ ہونے کا مشورہ ، ٹی آر ایس ایم پی ونود کمار
حیدرآباد۔ /4جون، ( سیاست نیوز) ٹی آر ایس کے رکن پارلیمنٹ ونود کمار نے کہا کہ نئی ریاست تلنگانہ اور آندھرا پردیش کیلئے مرکزی حکومت کی مراعات یکساں ہوں گی، اور آندھرا پردیش تنظیم جدید بل میں اس بات کی وضاحت کردی گئی ہے کہ رعایتوں کی فراہمی میں کسی ریاست کے ساتھ امتیازی سلوک نہیں ہوگا۔ آج حیدرآباد میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ونود کمار نے کہا کہ آندھرا پردیش کے قائدین یہ تاثر دینے کی کوشش کررہے ہیں کہ مرکزی حکومت آندھرا پردیش کیلئے ٹیکس میں رعایت دے گی۔ متوقع چیف منسٹر چندرا بابو نائیڈو وزیر اعظم اور دیگر مرکزی وزراء سے ملاقات کرتے ہوئے آندھرا پردیش کیلئے خصوصی پیاکیج اور رعایتوں کے حصول کی کوشش کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس سلسلہ میں تلنگانہ عوام کو اندیشوں کا شکار ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔ انہوں نے واضح کردیا کہ پارلیمنٹ میں ریاست کی تقسیم سے متعلق منظورہ بل میں دونوں ریاستوں کے ساتھ یکساں مراعات کی بات کہی گئی ہے۔انہوں نے کہا کہ ٹیکس اور دیگر رعایتوں کے سلسلہ میں صنعتکاروں کو اندیشوں کا شکار ہونے کی ضرورت نہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان مراعات کے ذریعہ تلنگانہ میں صنعتوں کے قیام میں کوئی رکاوٹ نہیں ہوگی۔ ونود کمار نے یقین ظاہر کیا کہ سیما آندھرا قائدین کی اس منفی مہم کا سرمایہ کاروں پر کوئی اثر نہیں پڑے گا اور بہت جلد تلنگانہ میں سرمایہ کاری کا آغاز ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت کے فیصلہ کے مطابق دونوں ریاستوں کے ساتھ یکساں سلوک کے سلسلہ میں ٹی آر ایس کے ارکان پارلیمنٹ مرکز سے نمائندگی کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ کے مجوزہ اجلاس میں پولاورم پراجکٹ کا مسئلہ ٹی آر ایس کی جانب سے زیر بحث لایا جائے گا۔ کھمم ضلع کے 7منڈلوں کے آندھرا پردیش میں انضمام کی مخالفت کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس پولاورم پراجکٹ کی تعمیر کے خلاف نہیں بلکہ وہ صرف ڈیزائن میں تبدیلی کی خواہاں ہے۔ ونود کمار نے کہا کہ تین ریاستیں اس پراجکٹ کی تعمیر کے خلاف ہیں لہذا اس پراجکٹ کی تعمیر انہیں یقینی نظر نہیں آتی۔

عدالت میں سبیتا اندرا ریڈی کی حاضری
حیدرآباد۔/4جون، ( این ایس ایس ) کرناٹک کے سابق وزیر اور شعبہ کانکنی کی سرگرم شخصیت گالی جناردھن ریڈی سے متعلق اوبلاپورم مائننگ کمپنی ( او ایم سی) کے ایک مقدمہ کے ضمن میں آندھرا پردیش کی سابق وزیر پی سبیتا اندرا ریڈی اور ایک ریٹائرڈ آئی اے ایس افسر کرپا نندم آج سی بی آئی کی عدالت میں حاضر ہوئے۔ بعد ازاں خصوصی عدالت کی سماعت 16جون تک ملتوی کردی گئی۔ یہ پہلا موقع ہے کہ سبیتا اور کرپانندم عدالت میں شخصی طور پر حاضر ہوئے اور شخصی مچلکہ بطور ضمانت پیش کئے۔

TOPPOPULARRECENT