Tuesday , December 18 2018

ریاست میں عنقریب اے پی ۔ کوریا یونیورسٹی کا قیام

چیف منسٹر سے کوریائی صنعتکاروں کی ملاقات، صنعتوں کے قیام میں اظہاردلچسپی
حیدرآباد ۔ 11 نومبر (سیاست نیوز) ساؤتھ کوریا کے صنعتکاروں نے چیف منسٹر این چندرا بابو نائیڈو سے ملاقات کرتے ہوئے آندھراپردیش میں 10 ہزار کروڑ روپئے کی سرمایہ کاری کرنے کا پیشکش کیا ہے۔ ساؤتھ کوریا کے 30 صنعتکاروں کے ایک وفد نے چندرا بابو نائیڈو سے ملاقات کی۔ ریاست میں جاری ترقیاتی کاموں کا جائزہ لیا۔ چیف منسٹر نے ریاست کی صنعتی پالیسی سے انہیں واقف کراتے ہوئے کن کن شعبوں میں سرمایہ کی جاسکتی ہے اس کی تفصیلات پیش کی۔ کوریا کے صنعتکاروں نے چندرا بابو نائیڈو کو بتایا کہ کوریا کے ایک مقام بومان میں 3000 ایک ہی مقام پر پائی جاتی ہیں۔ اس طرح کا ایک صنعتی مرکز آندھراپردیش میں قائم کرنے کے تعلق سے اپنی دلچسپی کا اظہار کیا۔ کوریا کے وفد نے بتایا کہ وہ ہندوستان کے مختلف ریاستوں مثلاً مدھیہ پردیش، اترپردیش، مہاراشٹرا، گجرات اور ہریانہ کا بھی دورہ کرچکے ہیں۔ تاہم انہیں تجارت کیلئے آندھراپردیش سازگار نظر آیا ہے۔ چندرا بابو نائیڈو نے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سرمایہ کاری کیلئے آندھراپردیش میں صنعتوں کے قیام کی صورت میں حکومت کی جانب سے مکمل تعاون فراہم کیا جائے گا۔ ساؤتھ کوریا کے صنعتکار آندھراپردیش کو اپنا دوسرا ہیڈکوارٹر تصور کرسکتے ہیں۔ کوریا کونسل جنرل جیانگ ڈیاکمن نے کہا کہ آندھراپردیش میں بہت جلد اے پی۔ کوریا یونیورسٹی قائم کی جائے گی۔

 

Top Stories

TOPPOPULARRECENT