Thursday , June 21 2018
Home / شہر کی خبریں / ریاست میں یکم جنوری سے تین اہم فلاحی اسکیمات کا آغاز

ریاست میں یکم جنوری سے تین اہم فلاحی اسکیمات کا آغاز

ہاسٹلس میں معیاری چاول و حاملہ آنگن واڑی خواتین کیلئے دوپہر کے کھانے کی اسکیم شامل

ہاسٹلس میں معیاری چاول و حاملہ آنگن واڑی خواتین کیلئے دوپہر کے کھانے کی اسکیم شامل
حیدرآباد۔/26ڈسمبر، ( سیاست نیوز) وزیر فینانس ای راجندر نے کہا کہ یکم جنوری سے تلنگانہ میں 3 اہم فلاحی اسکیمات کا آغاز کیا جائے گا۔ سوشیل ویلفیر ہاسٹلس میں بچوں کو معیاری چاول کی غذا سربراہ کی جائیگی۔ اسکے علاوہ آنگن واڑی سنٹرس میں حاملہ خواتین اور انکے بچوں کیلئے دوپہر کے کھانے کی اسکیم متعارف کی جائے گی۔ وزیر فینانس نے آج نئی دہلی میں مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی کے طلب کردہ وزرائے فینانس کی کانفرنس میں حصہ لیا۔ انہوں نے تلنگانہ حکومت کی جانب سے شروع کی جارہی فلاحی اسکیمات کی تفصیلات بیان کی۔ بعد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے راجندر نے کہا کہ سماجی بہبود کے ہاسٹلس میں غیر معیاری کھانے کی سربراہی کے سلسلہ میں طلبہ کی جانب سے کئی شکایات وصول ہوئیں جس کے بعد حکومت نے معیاری چاول سربراہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے مرکزی حکومت سے درخواست کی کہ وہ اس اسکیم کیلئے مرکزی کوٹہ سے چاول سربراہ کرے۔ انہوں نے کہا کہ نئی ریاست تلنگانہ میں فلاحی اسکیمات پر عمل آوری کیلئے مرکزی حکومت کا تعاون ناگزیر ہے۔ راجندر کے مطابق انہوں نے تلنگانہ ریاست کے مسائل اور اس کی ترقی کیلئے مرکز کے تعاون کے سلسلہ میں منصوبہ بندی کمیشن کو بھی واقف کرایا ہے۔ انہوں نے مرکز سے اپیل کی کہ وہ تلنگانہ کو واجب الادا بقایا جات آئندہ بجٹ سے قبل جاری کردے۔ وزیر فینانس کے مطابق مرکز نے تلنگانہ کی ترقی کے سلسلہ میں ہر ممکن تعاون سے اتفاق کیا ہے۔ راجندر نے کہا کہ تلنگانہ حکومت کی ترجیح فلاحی اسکیمات پر موثر عمل آوری اور اسکیمات کے فوائد حقیقی مستحقین تک پہنچانا ہے۔ اسی دوران وزیر فینانس نے سنٹرل ریلوے بورڈ کے صدرنشین اروند کمار سے ملاقات کی۔ رکن پارلیمنٹ ونود کمار کے ہمراہ کی گئی اس ملاقات میں ریاست کے لئے نئی ٹرینوں اور ریلوے پراجکٹس کی منظوری پر توجہ دلائی گئی۔ اس موقع پر نئی دہلی میں تلنگانہ کے نمائندہ وینو گوپال چاری اور دیگر قائدین موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT