Wednesday , December 19 2018

ریاست کرناٹک میں ہیلمیٹ کا استعمال لازمی

بیدر۔19ستمبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) حادثات سے متعلقہ مقدمات کی سماعت کے بعد دھارواڑ ہائیکورٹ جج نے ریاست بھر میں ہیلمیٹ کے استعمال کو لازمی قرار دیتے ہوئے فیصلہ دیا ہے ۔ باگل کوٹ ‘ بسویشور انجنیئر نگ کے طالب علم جو روڈ حادثہ میں شدید زخمی ہوئے تھے انصاف کیلئے انہوں نے تحت کی عدالت میں مقدمہ دائر کیا اور امداد بھی دی گئی ۔ اس کے باوجود ط

بیدر۔19ستمبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) حادثات سے متعلقہ مقدمات کی سماعت کے بعد دھارواڑ ہائیکورٹ جج نے ریاست بھر میں ہیلمیٹ کے استعمال کو لازمی قرار دیتے ہوئے فیصلہ دیا ہے ۔ باگل کوٹ ‘ بسویشور انجنیئر نگ کے طالب علم جو روڈ حادثہ میں شدید زخمی ہوئے تھے انصاف کیلئے انہوں نے تحت کی عدالت میں مقدمہ دائر کیا اور امداد بھی دی گئی ۔ اس کے باوجود طالب علم نے زائد امداد کیلئے دھارواڑ ہائیکورٹ میں درخواست داخل کی تھی ۔ درخواست کی سماعت کے بعد جسٹس منموہن سنگھ ریڈی اور جسٹس بی منوہر پر مشتمل ڈیویژن بنچ نے بتایا کہ حادثات میں اضافہ ہورہا ہے پھر بھی متعلقہ محکمہ جات کی جانب سے کوئی احتیاطی اقدامات نہیں کئے گئے ۔ ریاست کے بنگلور ‘ میسور ‘ ہبلی ‘ دھارواڑ ‘بیلگام اور گلبرگہ میونسپل کارپوریشن حدودکو چھوڑ کر کرناٹک وہیکل قانون کے تحت موٹر سائیکل چلانے والوں کیلئے ہیلمیٹ کا استعمال لازمی قرار دیا گیا ہے ۔ اس کے بجائے اس قانون کو ریاست کے تمام اضلاع میں سختی کے ساتھ لاگو کر کے ہیلمیٹ کے استعمال کو لازمی قرار دیا جائے ۔ ہائیکورٹ نے اس تعلق سے ریاستی حکومت کے محکمہ قانون کے کمشنر کو سختی کے ساتھ ہدایت دی ہے ۔ ہیلمیٹ استعمال کرنے سال 2006ء میں ہی قواعد مرتب کئے گئے تھے اس کے باوجود اس پر عمل آوری کیلئے کوئی اقدامات نہیں کئے گئے ۔ ریاست میں سب سے زیادہ موٹر سائیکل سواری روڈ حادثات میں شدید زخمی ہوئے ہیں ان کے سرپر چوٹ آئی ہے اور وہ ہلاک ہوئے ہیں ۔ گلبرگہ ڈیویژن کے بیلاری ‘ گلبرگہ ‘ بیدر اور دوسرے مقامات پر جہاں موسم گرما میں گرمی کی شدت کی وجہ سے ہیلمیٹ کے استعمال میں رعایت دی گئی تھی ۔ دھارواڑ ہائیکورٹ نے ریاست کے تمام اضلاع میں ہیلمیٹ کے استعمال کو لازمی قرار دینے کا حکم دیا ہے

TOPPOPULARRECENT