Friday , October 19 2018
Home / اضلاع کی خبریں / ریاست کو قرض کے کنویں میں ڈھکیل دیا گیا

ریاست کو قرض کے کنویں میں ڈھکیل دیا گیا

بودھن میں کانگریس کارکنوں کا اجلاس، سابق وزیر سدرشن ریڈی اور دیگر کا خطاب
بودھن۔/21 فبروری ، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) سابق ریاستی وزیر و کانگریس پارٹی کے سینئر قائد مسٹر سدرشن ریڈی نے یہاں پارٹی کارکنوں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت نے ریاست تلنگانہ میں نت نئی اسکیمات شروع کرنے لاکھوں کروڑوں روپئے قرض حاصل کرتے ہوئے نوتشکیل ریاست کو قرض کے کنویں میں ڈھکیل دیا ۔خطیر رقمی منصوبوں سے کئی اسکیمات کا آغاز کیا گیا لیکن خود چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ اپنے انتخابی وعدے کو پورا کرنے نظام شوگر فیکٹری کے احیاء کے لئے صرف 100کروڑ روپئے رقم خرچ کرنے تیار نہیں ہیں جبکہ NSF کی کشادگی کے باعث مقامی طور پر بے روزگاری کا مسئلہ حل ہوسکتا ہے۔ مسٹر ریڈی نے کہ مشن بھگیرتا اسکیم کیلئے جگہ جگہ پائپ لائن بچھائی جارہی ہے ۔ ان پائپس میں تلنگانہ سرکار پانی کہاں سے پہنچائے گی یہ سمجھ سے باہر ہے۔ مسٹر سدرشن ریڈی نے کہاکہ 4 مارچ کو ریاستی صدر کانگریس پارٹی مسٹر اتم کمار ریڈی کا بودھن کو متوقع دورہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ صدر پی سی سی کے دورہ بودھن کے موقع پر کانگریس پارٹی این ایس ایف کے تعلق سے اپنی پالیسی کا اعلان کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی ریاست تلنگانہ میں برسراقتدار آنے کے بعد ہر بیروزگار گریجویٹ کو ماہانہ تین ہزار روپئے وظیفہ فراہم کرے گی۔ انہوں نے آج کے اس پارٹی اجلاس میں 400 سے زائد نوجوانوں کی کانگریس پارٹی میں شمولیت پر مسرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے اپنی 30 سالہ سیاسی زندگی میں اس قدر بھاری تعداد میں کانگریس پارٹی میں نوجوانوں کی شمولیت نہیں دیکھی۔ ضلع صدر کانگریس طاہر بن حمدان نے کہا کہ کسی بھی مسلمان اور ایس ٹی طبقہ کا کوئی فرد نے کے سی آر سے 12 فیصد تحفظات کا مطالبہ نہیں کیا بلکہ خود مسٹر کے سی آر نے مسلمانوں اور ایس ٹی طبقہ کے افراد کو اپنی طرف ہمیشہ راغب رکھنے کیلئے سیاسی چال چلی ہے۔ فلور لیڈر بلدیہ عابد سیٹھ نے کہا کہ کانگریس حکومت گزشتہ ساٹھ سال سے برسراقتدار ہے لیکن وہ کبھی بھی سرکاری اراضیات پر قبضہ کرنے والوں کی ہمت افزائی نہیں کی جس کے باعث آج بھی راست میں سرکاری اراضیات موجود ہیں۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ تین میعاد سے مسٹر سدرشن ریڈی رکن اسمبلی بودھن منتخب ہوتے رہے ہیں اور ریاستی کابینہ میں بھی رہے لیکن ان کے دور میں کبھی کسی بھی لینڈ مافیا کو سرکاری اراضیات کی طرف نظر اٹھانے کا موقع نہیں دیا۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ چار سالوں کے دوران بودھن میں لینڈ مافیا سرگرم عمل ہوچکا ہے۔ قبل ازیں انجینئرنگ کے ایک طالب علم محمد پرویز نے اپنے خطاب میں کہا کہ مسٹر کے سی آر مسلم نوجوانوں کو گزشتہ چار سالوں سے ملازمت فراہم کرنے اور 12فیصد تحفظات کی فراہمی کا وعدہ کرتے ہوئے دھوکہ دیتے آرہے ہیں۔ قبل ازیں بلدی حلقہ نمبر دو، تین، چار ، پانچ ، نو، دس، گیارہ، 12، 13، 25، 35 سے آئے ہوئے تقریباً چار سو نوجوانوں نے کانگریس پارٹی میں شمولیت اختیار کی جن کا مسٹر ریڈی نے استقبال کا۔ جلسہ کی کارروائی صدر ٹاؤن گنا پرساد نے چلائی۔ اس موقع پر ارکان بلدیہ سید رفیع الدین، دامودھر، خواجہ فیاض الدین احمد، شیخ کلیم اور کانگریس پارٹی کارکنوں کی کثیر تعداد موجود تھی۔

TOPPOPULARRECENT