Monday , December 11 2017
Home / شہر کی خبریں / ریاست کی ترقی اور پراجیکٹس کی تعمیر میں کانگریس رکاوٹ

ریاست کی ترقی اور پراجیکٹس کی تعمیر میں کانگریس رکاوٹ

اتم کمار ریڈی کو سیاسی مقاصد زیادہ عزیز ۔ منحرف رکن پارلیمنٹ ٹی آر ایس سکھیندر ریڈی کا الزام
حیدرآباد۔/21جون، ( سیاست نیوز) کانگریس سے ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرنے والے رکن پارلیمنٹ جی سکھیندر ریڈی نے کانگریس پارٹی اور اس کی قیادت کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے ریاست کی ترقی اور خاص طور پر پراجکٹس کی تعمیر میں رکاوٹ پیدا کرنے کا الزام عائد کیا۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے سکھیندر ریڈی نے کہا کہ پردیش کانگریس کے صدر اتم کمارریڈی کو عوام اور کسانوں کی ترقی سے زیادہ سیاسی مقصد براری عزیز ہے اور ان کی غلط پالیسیوں کے نتیجہ میں پارٹی قائدین اور عوامی نمائندے ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس کی ریاستی قیادت ان تبدیلیوں کے باوجود سبق سیکھنے کیلئے تیار نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ ریاست کے قیام کے بعد سے عوام نے کانگریس اور دیگر اپوزیشن جماعتوں کو مسترد کردیا ہے لیکن یہ جماعتیں حکومت پر تنقیدوں کے ذریعہ عوامی ناراضگی کو دعوت دے رہی ہیں۔ رکن پارلیمنٹ کے مطابق ٹی آر ایس حکومت کی فلاحی اور ترقیاتی اسکیمات کے نتیجہ میں عوام مکمل طور پر حکومت کے ساتھ ہیں اور اپوزیشن کی الزام تراشیوں کا کوئی اثر نہیں پڑیگا۔ انہوں نے کہا کہ ملنا ساگر پراجکٹ کو روکنے کیلئے کسانوں کو بھڑکانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس پراجکٹ کے بارے میں اپوزیشن جماعتوں کو حقائق کا کوئی علم نہیں ہے اور وہ صرف اندیشوں کی بنیاد پر کسانوں کو مشتعل کرنے کی کوششوں میں مصروف ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس پراجکٹ کی تعمیر سے کئی مواضعات کے زیر آب آنے کی اطلاعات بے بنیاد ہیں۔ سکھیندر ریڈی نے کہا کہ پولی چنتلا پراجکٹ کی تعمیر کے وقت اتم کمار ریڈی کے حلقہ کے 14مواضعات زیر آب آگئے تھے لیکن اسوقت انہوں نے خاموشی اختیار کرلی۔ انہوں نے اپنے حلقہ کے مواضعات کے بارے میں خاموشی اختیار کرنے والے اتم کمار ریڈی کو اس پراجکٹ کے بارے میں کہنے کا کوئی حق نہیں ہے۔ سکھیندر ریڈی نے تلگودیشم کے رکن اسمبلی ریونت ریڈی پر اپنے مقام سے زیادہ گفتگو کرنے کا الزام عائد کیا۔ انہوں نے کہا کہ ریونت ریڈی جو نوٹ برائے ووٹ کیس میں ملوث ہیں ان کا سماجی مقاطعہ کیا جانا چاہیئے۔ انہوں نے پراجکٹ کے خلاف ریونت ریڈی کے مجوزہ احتجاج کو محض سیاسی مقصد براری سے تعبیر کیا۔ انہوں نے ٹی آر ایس میں اپنی شمولیت کو حق بجانب قرار دیتے ہوئے کہا کہ کسی کو انہیں اصول پسندی سکھانے کی ضرورت نہیں ہے۔

TOPPOPULARRECENT