ریسرچ کو لیاب سے لینڈ تک پہنچائیں، وزیراعظم کی اپیل

امپھال 16 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے آج سائنسدانوں کو تاکید کی کہ اپنی ریسرچ کو لیابس سے لینڈ تک پہنچاتے ہوئے عوام کے عظیم تر مفاد کی تکمیل کو یقینی بنائیں اور کہاکہ اب ریسرچ اینڈ ڈیولپمنٹ کو قوم کی ترقی کے لئے ریسرچ کے طور پر ازسرنو تشریح کرنے کا وقت آچلا ہے۔ وہ یہاں 105 ویں انڈین سائنس کانگریس کے افتتاحی سیشن سے خطاب کررہے تھے۔ اُنھوں نے کہاکہ ہندوستان کی شاندار روایتیں ہیں اور دریافتوں نیز سائنس و ٹیکنالوجی کے استعمال دونوں معاملوں میں ہماری طویل تاریخ ہے۔ مودی نے کہاکہ ملک کو مستقبل کے چیالنجس سے نمٹنے کے لئے بروقت تیار رہنا ہوگا تاکہ قوم کی ترقی و خوشحالی میں ٹیکنالوجی کے استعمال کو یقینی بنایا جاسکے۔ اُنھوں نے کہاکہ سائنس کی ترقی سے عام لوگوں کے سماجی و معاشی مسائل حل ہونا چاہئے۔ وزیراعظم نے کہاکہ سائنسی کارہائے نمایاں کو سماج کے گوشے گوشے تک پہنچانے کی ضرورت ہے۔ اُنھوں نے اِس موقع پر خصوصیت سے شمال مشرق کے بارے میں بھی اظہار خیال کیا اور اِس خطہ کو ہندوستان کی ترقی کے لئے نیا انجن قرار دیا۔ اُنھوں نے کہاکہ ملک کی ترقی کی کہانی مشرقی ہند کے مغربی ہند کے مساوی ہونے تک نامکمل رہے گی۔ مودی نے اِس خطہ میں انفراسٹرکچر ڈیولپمنٹ پر زور دیتے ہوئے کہاکہ 2014 ء میں منی پور میں 1,200 کیلو میٹر لمبائی کے مسلمہ قومی شاہراہیں تھیں لیکن گزشتہ چار برسوں میں ہم نے مزید 460 کیلو میٹر لمبائی والی سڑکوں کو قومی شاہراہوں کا درجہ دیا ہے۔ وزیراعظم نے بتایا کہ اب 8 ریاستوں میں سے 7 ریل نیٹ ورک سے جڑے ہیں اور باقی ریاستی دارالحکومتوں بشمول امپھال کو بھی براڈ گیج نیٹ ورک سے جوڑنے کے پراجکٹس جاری ہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT