Tuesday , November 21 2017
Home / کھیل کی خبریں / ریو اولمپکس میں پاکستان کاسفر ختم، 24 سال سے تمغہ نہیںجیتا

ریو اولمپکس میں پاکستان کاسفر ختم، 24 سال سے تمغہ نہیںجیتا

کراچی ، 16 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کی اتھلیٹ نجمہ پروین کی خواتین کے 200 میٹر دوڑ کے مرکزی مرحلے کیلئے کوالیفائی ہونے میں ناکامی کے بعد پاکستانی دستے کا ریو اولمپکس 2016ء کا سفر اختتام پذیر ہوگیا۔ نجمہ نے 200 میٹرکی منزل کو 26.11 سکنڈز میں طے کیا۔ نجمہ پاکستان کے 7 رکنی دستے میں سب سے آخر میں ریواولمپکس سے باہر ہونے والی رکن ہیں۔ قبل ازیں جوڈو اسٹار شاہ حسین جو پاکستان کی جانب سے براہ راست اولمپکس کیلئے کوالیفائی کرنے والے تین اتھلیٹس میں سے ایک رہے، آخری مرحلے میں جگہ بنانے میں ناکام رہے تھے۔ شاہ حسین نے پہلے مرحلے میں کامیابی حاصل کی تھی۔ تاہم 100 کلوگرام جوڈو مقابلوں کے دوسرے مرحلے میں یوکرین کے آرٹم بلوشیکنو نے انھیں شکست دی ۔ شاہ حسین سے قبل شوٹر منہل سہیل اور پیراک حارث بانڈے بھی متاثر کن کارکردگی دکھانے میں ناکام رہے تھے۔ دوسری جانب ریواولمپکس میں پاکستانی پرچم اٹھانے والے غلام بشیر اور لیانا سوان جنھوں نے ترتیب وار مردوں کے 25 میٹر اور خواتین کے 50 میٹرفری اسٹائل میں حصہ لیا ، وہ بھی پاکستان کو کوئی میڈل نہ دلاسکے۔ واضح رہے پاکستان گزشتہ 24 سال سے اولمپکس میں کوئی میڈل حاصل نہیں کرسکا ہے۔ پاکستان کی تاریخ میں یہ پہلا موقع رہا کہ نیشنل ہاکی ٹیم اولمپکس کیلئے کوالیفائی کرنے میں ناکام ہوئی جبکہ دیگر اکثر اتھلیٹس بھی باآسانی گیمز تک رسائی میں ناکام رہے تھے جن میں سے کچھ وائلڈ کارڈ کے ذریعے ریو تک پہنچے۔ پاکستان نے 1988ء کے اولمپکس میں ہاکی کے علاوہ باکسنگ میں دو میڈلز حاصل کئے تھے۔ مگر اس دفعہ کوئی باکسر بھی ریواولمپکس میں جگہ نہ بنا سکا۔

TOPPOPULARRECENT