Wednesday , September 19 2018
Home / کھیل کی خبریں / ریڈ گیرارڈ نئی صدی کی پہلی گولڈ میڈلسٹ بن گئیں

ریڈ گیرارڈ نئی صدی کی پہلی گولڈ میڈلسٹ بن گئیں

پیونگ چانگ۔12 فبروری (سیاست ڈاٹ کام ) 17 سالہ امریکن سنوبورڈر ریڈ گیرارڈ نے ونٹر گیمز میں نئی صدی کی پہلی گولڈ میڈلسٹ بننے کا اعزاز حاصل کرلیا۔مینز سنوبورڈ سلوپ اسٹائل ایونٹ میں کینیڈا کے مارک میک موریس نے برونز میڈل حاصل کیا، وہ گذشتہ برس خوفناک حادثے کا شکار ہوئے تھے لیکن انھوں نے تیزی سے صحتیاب ہونے کے بعد ونٹر گیمز میں شمولیت ممکن بنائی تھی۔ گذشتہ برس سنوبورڈنگ کے دوران ان کی 17 ہڈیاں ٹوٹ گئی تھیں، جس کے بعد ان کی زندگی کو بھی خطرات لاحق ہوئے تھے، اسی ایونٹ میں امریکہ کے ریڈمونڈ نے پہلا اور کینیڈا کے میکس پیروٹ نے دوسرا مقام حاصل کیا ہے۔ویمنز اسپیڈ اسکیٹنگ 3000 میٹر ایونٹ میں نیدرلینڈز کی کارلین نے گولڈ میڈل جیتا ۔ سلور میڈل ان کی ہموطن ایرین ووسٹ اور تیسرا مقام انٹونیٹی ڈی جونگ نے حاصل کیا۔ مجموعی میڈلز کی فہرست میں جرمنی دوسرے دن بھی 3 گولڈ میڈل کے ساتھ سرفہرست رہا۔گیمز کے مینز کراس کنٹری اسکائی تھلون میں ناورے کے سیمون ہیگسٹاڈ نے گولڈ میڈل جیتا، ان کے ہموطن مارٹن جونسرٹ نے سلور اور ناروے ہی کے ہانس کرسٹر نے برونز میڈل پایا۔ نیدرلینڈز کے سیون کریمر نے مینز 5000 میٹر اسپیڈ اسکیٹنگ میں بازی مارلی، یہ ان کا لگاتار تیسرا اولمپک خطاب بنا، کینیڈا کے ٹیڈ جان بوئلمین نے سلور جبکہ ناورے کے سیورے پیڈرسن نے برونز میڈل قبضے میں کیا۔جرمنی کے ارینڈ پیفر نے فرنچ امیدوں کا محور مارٹن فورکیڈ کو مات دیکر مینز 10 کلومیٹر اسپرنٹ بائتھلون میں گولڈ میڈل حاصل کرلیا۔ چیک جمہوریہ کے مائیکل کریمر نے سلور جبکہ اٹلی کے ڈومنیک ونڈیچ نے برونز میڈل پایا۔

TOPPOPULARRECENT