Sunday , August 19 2018
Home / شہر کی خبریں /   ر2000روپیوں کے نوٹس کی تنسیخ پر افواہیں

  ر2000روپیوں کے نوٹس کی تنسیخ پر افواہیں

تجارتی اداروں میں نوٹس کو قبول کرنے سے انکار
بینکس کو نوٹس جاری نہ کرنے کی ہدایت ، عوام کی تشویش میں مزید اضافہ
حیدرآباد۔15ڈسمبر(سیاست نیوز) 2000 کے نئی کرنسی نوٹوں کی تنسیخ کی اطلاعات شہریو ںمیں بے چینی پیدا کئے ہوئے ہیں ۔ گذشتہ ایک ماہ سے جاری 2000 کی نئی کرنسی نوٹ کی تنسیخ کی اطلاع اور 20 جنوری سے کرنسی تنسیخ کے نئے دور کی شروعات کی اطلاعات کے سبب بیشتر تجارتی اداروں کی جانب سے 2000 کی نوٹ قبول کرنے سے انکار کیا جانے لگا ہے اور اس کے لئے چلر نہ ہونے کا بہانہ کیا جا رہا ہے ۔ بتایاجاتاہے کہ حکومت نے 2000 کی کرنسی نوٹ کو بتدریج واپس لینے اور نئی اشاعت بند کرنے کی پالیسی اختیار کی ہے اور بینکوں کو ہدایت جاری کی گئی ہیں کہ وہ 2000کے نوٹ گاہکوں کو جاری نہ کریں لیکن اس بات کی کوئی تصدیق نہیں کی جا رہی ہے۔بینکو ںکی جانب سے 2000کے کرنسی نوٹ جاری نہ کئے جانے کے سبب عوام کی تشویش میں مزید اضافہ ہونے لگا ہے ۔ حکومت ہند کی جانب سے سیونگ بینک کھاتوں میں جمع رقومات کو فکسڈ ڈپازٹ میں تبدیل کرنے کے سلسلہ میں تیار کردہ FDRIمجوزہ بل کی اطلاع عام ہوتے ہی عوام کی جانب سے بینکوں سے رقومات نکالنے کا سلسلہ شروع ہوگیا اور اس دوران بھی 2000 کے کرنسی نوٹوں کی کم اجرائی اور بینکوں میں رقومات کی کمی کے ساتھ مطلوبہ رقومات کی عدم اجرائی نے صورتحال کو مزید ابتر بنا دیا ہے۔ ماہرین معاشیات کے مطابق نئی کرنسی نوٹ جو جاری کی جاتی ہے اس کی اندرون 5برس تنسیخ کی کوئی گنجائش نہیں ہے لیکن اس کی اشاعت کو روکتے ہوئے بازار میں موجود کرنسی کو بینکوں تک واپس لانے کے اقدامات کو ممکن بنایا جاسکتاہے۔ بتایاجاتاہے کہ بازار میں موجود 2000 روپئے کے کرنسی نوٹوں کی بینکوں کو واپسی سے عوام کو کوئی مسئلہ نہیں ہوگا لیکن جن لوگوں نے بھاری مقدار میں 2000 کے کرنسی نوٹ جمع کر رکھے ہیں ان کیلئے مسائل پیدا ہوسکتے ہیں۔ محکمہ فینانس کے ذرائع کے مطابق ملک کے کئی شہرو ںمیں 2000 کے کرنسی نوٹوں کا ذخیرہ کئے جانے کی اطلاعات محکمہ انکم ٹیکس کے پاس بھی موجود ہے اور یہ غیر محسوب دولت صرف اسی طریقہ سے باہر نکالی جا سکتی ہے۔ شہریو ںمیں گشت کرر ہی 20 جنوری سے کرنسی تنسیخ کی اطلاع درست نہیں ہے لیکن 2000 کی کرنسی کے استعمال کو محدود کئے جانے کے امکانات کو مسترد نہیں کیا جا رہاہے کیونکہ 2000کے کرنسی نوٹوں کی اشاعت کو ریزرو بینک آف انڈیا نے بند کردیا ہے اور نئے نوٹوں کی اشاعت عمل میں نہیں لائی جا رہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT