Thursday , November 23 2017
Home / ہندوستان / ر5000 روپئے سے زائد پرانی کرنسی صرف ایک مرتبہ جمع کرانے کی اجازت

ر5000 روپئے سے زائد پرانی کرنسی صرف ایک مرتبہ جمع کرانے کی اجازت

٭    500 کی نئی سیریز جاری کرنے کا اعلان
٭   بینکوں کو پرانے نوٹ جلانے کی اجازت نہیں
٭  کرپشن اور کالے دھن میں زبردست اضافہ : کجریوال

اب تک ڈپازٹ نہ کرنے کی وضاحت بھی کرنی ہوگی : حکومت
نئی دہلی۔19 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) ریزرو بینک آف انڈیا (آر بی آئی) نے 500 اور 1000 روپئے کے منسوخ شدہ نوٹوں میں 5000 سے زائد رقم بینکوں میں ڈپازٹ کرنے پر آج پابندی عائد کی ہے اور کہا ہے کہ 30 ڈسمبر تک ہر کھاتہ میں صرف ایک مرتبہ پرانی نوٹوں میں 5000 روپئے رکھائے جاسکتے ہیں اور اس کے لئے بھی کھاتہ داروں کو بینک عہدیداروں سے یہ وضاحت بیان کرنا ہوگا کہ یہ رقم تاحال ڈپازٹ کیوں نہیں کروائی گئی تھی۔ آر بی آئی نے کہا کہ پردھان منتری غریب کلیان یوجنا سے موسوم کالے دھن کی نئی رعایتی اسکیم کے تحت لامحدود رقم کھاتوں میں دکھائی جاسکتی ہے جس پر معلنہ قواعد کے مطابق ٹیکس اور جرمانہ ادا کرنا ہوگا۔  5000 روپئے تک ایسی تمام منسوخ شدہ نوٹ 30 ڈسمبر تک معمول کے مطابق قبول کی جائیں گی اور متعلقہ کھاتوں میں جمع کیا جائے گا۔ ممبئی سے موصولہ اطلاعات کے بموجب آر بی آئی نے ایک وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ بینکوں کو صارفین کے ڈپازٹ کروائے ہوئے 2005ء سے پہلے کے کرنسی نوٹ بشمول منسوخ شدہ 500 اور 1000 روپئے کے نوٹ جلانے کی اجازت نہیں ہے۔ آر بی آئی نے یہ بھی اعلان کیا کہ 500 روپئے کے نئے نوٹ، نئی سیریز میں جس میں انسیٹ میں حرف ‘R’ تحریر ہوگا، جاری کئے جائیں گے۔ پاناجی سے موصولہ اطلاع کے بموجب عام آدمی پارٹی کے سربراہ چیف منسٹر دہلی اروند کجریوال نے دعویٰ کیا کہ ملک میں اعلیٰ کرنسی نوٹوں کی تنسیخ کے بعد کرپشن کی سطح میں اضافہ ہوگیا ہے۔ کالے دھن میں بھی اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ وہ جنوبی گوا کے انتخابی حلقہ کنکلم میں ایک جلسہ عام سے خطاب کررہے تھے۔

TOPPOPULARRECENT