Wednesday , December 12 2018

زائد امپورٹ کا نفاذ‘ ہندوستان بھی ٹرمپ کی تنقیدوں کا نشانہ

ہارلے ڈیوڈسن موٹرسائیکلس پر 75% سے گھٹاکر ڈیوٹی50% کرنے پر نریندر مودی پر بھی نکتہ چینی
جب ہم آپ سے کچھ نہیںلیتے تو آپ ہم سے 50% بھی کیوں طلب کررہے ہیں ؟

واشنگٹن ۔14فبروری ( سیاست ڈاٹ کام ) امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے بالآخر آج ہندوستان کو بھی آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے ہارلے ڈیوڈسن موٹر سائیکلس پر انتہائی زائد امپورٹ ڈیوٹی نافذ کرنے شدید تنقیدیں کیں ۔ یہی نہیں بلکہ انہوں نے جس طرح کل جوابی زائد ٹیکس عائد کرنے کچھ ممالک کو جو دھمکیاں دیں اسی لہجہ میں انہوں نے ہندوستان کو بھی آنکھیں دکھاتے ہوئے کہا کہ اگر زائد امپورٹ ڈیوٹی کا سلسلہ مسدود نہیں کیا گیا تو امریکہ میں موجود ہزاروں لاکھوں ہندوستانی موٹر سائیکلوں کی امپورٹ شرح میں اضافہ کردیا جائے گا ۔ فولاد کی صنعت پر کانگریس ارکان کے ساتھ ایک اہم مباحثہ کے دوران انہوں نے کہا کہ حالیہ دنوں امپورٹ شرح کو 75فیصد سے گھٹا کر 50فیصد کرنے کا جو اعلان کیا گیاہے وہ ناکافی ہے کیونکہ ہندوستان کو امریکہ کے ساتھ بالکل ویسا ہی رویہ اختیار کرنا چاہیئے جیسا امریکہ ہندوستان کے ساتھ کرتا ہے یعنی موٹر سائیکلوں پر امریکی ٹیکس کی شرح صفر ہے تو پھر ہندوستان 50% امپورٹ ڈیوٹی کیوں نافذ کررہا ہے ؟ آج ہمارے ایسے کئی حلیف اور حریف ممالک ہیں جہاں ہمارے پروڈکٹس برآمد کئے جاتے ہیں اور ان کے پروڈکٹس امریکہ میں درآمد کئے جاتے ہیں ۔ وہ ممالک امریکہ میں اپنے پروڈکٹس کے ذریعہ قدم جمانے معیاری ٹیکس ادا کرتے ہیں اور ہم بھی ایسا ہی کرتے ہیں جن میں ہارلے ڈیوڈ سن جو موٹر سائیکلس بنانے میں عالمی شہرت یافتہ کمپنی ہے اور صرف کچھ ہی ممالک کو برآمد کی جاتی ہے لیکن افسوس کی بات ہے کہ ان ممالک میں ہندوستان بھی شامل ہے جو زائد ٹیکس کا نفاذ کررہا ہے ۔ ٹرمپ نے جب یہ بات کہی تو اس وقت وہاں موجود لوگوں نے قہقہے لگائے ۔ اس موقع پر ٹرمپ نے اس موضوع پر حالیہ دنوں میں وزیراعظم ہند نریندر مودی سے ہوئی بات چیت کا بھی حوالہ دیا ۔ انہوں نے مسکراتے ہوئے کہا کہ ہندوستان کی ایک معزز ہستی نے ان سے فون پر بات کرتے ہوئے بتایا تاکہ موٹر سائیکلوں پر عائد کردہ ٹیکس کی شرح کو 75% سے گھٹا کر 50% کردیا گیا ہے ‘ ان کا اشارہ وزیراعظم نریندر مودی کی جانب تھا جن سے انہوں نے گذشتہ ہفتہ ٹیلی فون پر بات کی تھی ۔ ٹرمپ نے مضحکہ خیز انداز میں کہا کہ اگر آپ ہارلے ڈیوڈ سن ہیں تو آپ 50% یا 75%ٹیکس کیلئے تیار ہوجائیں ۔ جس کے بعد آپ کی موٹر سائیکلس کو ملک میں چلائے جانے کی اجازت ہوگی لیکن ہندوستان یہ بھول رہا ہے کہ امریکہ میں ہزاروں موٹر سائیکلس ایسی ہیں جو ہندوستان میں تیار کردہ ہیں اور ہم ان پر کوئی ٹیکس عائد نہیں کرتے ۔ اس کے بارے میں آپ کو ایسے لاکھوں لوگ ملیں گے جو اس نکتہ سے لاعلم ہیں ۔ جانتے ہیں امریکہ ہندوستانی موٹر سائیکلس پر کیا ٹیکس عائد کرتا ہے ؟ جواب یہ ہے ’’ کچھ نہیں !‘‘ ۔ انہوں نے قانون سازو اور اپنے کابینی رفقاء سے یہ بات کہی ۔ انہوں نے ایک بار پھر اپنی وہی بات دہرائی جو انہوں نے کل کہی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT