Saturday , June 23 2018
Home / اضلاع کی خبریں / زانیوں کو پھانسی کی سزا کی تجویز

زانیوں کو پھانسی کی سزا کی تجویز

بیدر ۔14 نومبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ریاستی وزیر برائے بہبودی خواتین و اطفال شریمتی اوما شری نے بتایا کہ خواتین پر جنسی حملے کرنے والے ملزمین کوپھانسی کی سزا تجویز کرنے ریاستی حکومت مرکزی حکومت پر دباؤ ڈالے گی ۔ انہوں نے کہا کہ حالیہ دنوں میں عصمت دری کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے ۔ اگر اس پر روک لگانی ہے تو ضروری ہے کہ ایسے ظالموں کیلئے

بیدر ۔14 نومبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ریاستی وزیر برائے بہبودی خواتین و اطفال شریمتی اوما شری نے بتایا کہ خواتین پر جنسی حملے کرنے والے ملزمین کوپھانسی کی سزا تجویز کرنے ریاستی حکومت مرکزی حکومت پر دباؤ ڈالے گی ۔ انہوں نے کہا کہ حالیہ دنوں میں عصمت دری کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے ۔ اگر اس پر روک لگانی ہے تو ضروری ہے کہ ایسے ظالموں کیلئے پھانسی کی سزا مقرر کردی جائے ۔ مرکزی حکومت کو چاہیئے کہ وہ قانون میں ترمیم لاکر ایسے جنسی جنونیوں کیلئے پھانسی کی سزا تجویز کرے ۔ کرناٹک میں طالبات پر جنسی حملوں کو روکنے کیلئے ایسے ملزمین کے خلاف غنڈہ ایکٹ جاری کرنے کے باوجود یہ معاملات تھمنے کا نام نہیں لے رہے ہیں اور اب ضروری ہوگیا ہے کہ ایسے ملزمین کو سولی پر چڑھا دیا جائے ۔ استری شکتی اوما شری نے بتایا کہ ریاست میں ایک لاکھ 40ہزار استری شکتی گروپ قائم ہیں ان گروپس کو مزید مضبوط بنانے کیلئے ہر استری شکتی گروپ اسکیم شروع کی گئی تھی ۔ اس وقت ہر استری گروپ کیلئے پانچ ہزار کی امداد دینا طئے ہوا تھا اب حکومت ان گروپس کو پانچ ہزار امداد دے گی ۔ اس اسکیم سے ریاست کے خزانے پر 60کروڑ کا اضافی بوجھ پڑے گا ۔ وزیر برائے بہبودی خواتین اطفال نے بتایا کہ ریاست میں آئے دن کئی لڑکیوں پر جنسی حملوں کی بڑھتی تعداد کے پیش نظر حکومت متاثرہ لڑکیوں کی امداد کیلئے ایک علحدہ فنڈ مقرر کرنے کے بارے میں بھی غور کررہی ہے اور ان فنڈ سے جنسی حملہ کا شکار لڑکیوں کے علاج اور ان کے معاشی مدد کی جائے گی ۔ اس فنڈ کے ذریعہ جنسی حملوں کا شکار لڑکیوں کے علاج کیلئے ایک لاکھ تک کی امداد اور جنسی حملوں کا شکار ہونے والی لڑکیوں کے علاج کیلئے ایک لاکھ تک کی امداد اور جنسی حملوں کا شکار ہونے والی لڑکیوں کے خاندان کو 15تا 75ہزار روپئے کی امداد فراہم کی جائے گی ۔ اس مقصد کیلئے قانون میں ترمیم بھی لائی جارہی ہے ۔ 18سال سے زائد عمر کی لڑکی اگر عصمت دری کا شکار ہوگی تو اس کے علاج کیلئے ایک تا پانچ لاکھ روپئے تک کی امداد دی جانے والی ہے ۔ جنسی حملوں کے معاملات میں اگر 48گھنٹوں کے اندر اس کی تصدیق اور پولیس تھانوں میں شکایت درج ہونے پر فوری امداد کے طور پر 10ہزار کی امداد دی جائے گی ۔

TOPPOPULARRECENT