Wednesday , December 13 2017
Home / دنیا / زبردست بارش ،بنگلہ دیشی روہنگیاؤں کے مصائب

زبردست بارش ،بنگلہ دیشی روہنگیاؤں کے مصائب

شیخ حسینہ کا میانمار سے روہنگیاؤں کو واپس لینے کا مطالبہ
کاکس بازار ۔ 20 ستمبر (سیاست ڈاٹ کاز) بنگلہ دیش کی فوج کو آج حکم دیا گیا ہیکہ لاکھوں روہنگیا پناہ گزینوں کی مدد کے وسیع پیمانے پر انتظامات کئے جائیں۔ نئے پناہ گزینوں کے رجسٹریشن کیلئے 6 ماہ درکار ہوں گے۔ فوج کو فوری کاکس بازار میں تعینات کردیا گیا ہے جو سرحد سے متصل ہے۔ یہاں پر 4لاکھ 20 ہزار روہنگیا مسلمان 25 اگست سے اب تک آچکے ہیں۔ ایک سینئر وزیر عبیدالقادر نے اس بات کا انکشاف کیا۔ فوجی پناہ گاہیں اور بیت الخلاء تعمیر کررہے ہیں۔ ہزاروں پناہ گزین اب بھی زبردست بارش کے باوجود کھلے مقامات پر سونے کیلئے مجبور ہیں۔ پناہ گاہوں کی تعمیر اور صفائی کا انتظام فوج کیلئے ایک مشکل مہم ثابت ہورہی ہے۔ وزیراعظم بنگلہ دیش شیخ حسینہ واجد نے فوجیوں کو حکم دیا ہیکہ وہ نظم و ضبط کی برقراری اور راحت رسانی اشیاء کی تقسیم کو یقینی بنائیں۔ چلتی گاڑیوں سے عطیہ دہندگان غذائی اشیاء اور ان کی پیاکٹس پھینکنے پر مجبور ہوگئے ہیں کیونکہ تقسیم کے وقت لاکھوں افراد ہجوم جمع ہورہا ہے۔ گذشتہ 10 دن کے دوران کم از کم 4 لاکھ پناہ گزین یہاں پہنچ چکے ہیں۔ بعض مقامات پر اضافہ پانی کے پمپ نصب کئے گئے ہیں اور سڑک کے کنارے بیت الخلاؤں کی تعمیری اشیاء کا ڈھیر نظر آتا ہے۔ ڈھاکہ سے موصولہ اطلاع کے بموجب وزیراعظم بنگلہ دیش شیخ حسینہ واجد نے حکومت میانمار سے ایک بار پھر اپیل کی ہیکہ روہنگیا مسلمان پناہ گزینوں کو جو بدھسٹ اکثریتی ملک سے تشدد کی بناء پر فرار ہوکر بنگلہ دیش منتقل ہورہے ہیں، واپس لے لیں۔ وہ اقوام متحدہ کے جنرل اسمبلی اجلاس سے خطاب کررہی تھی۔

TOPPOPULARRECENT