Sunday , February 25 2018
Home / Top Stories / زبیر کی فائرنگ سے مصطفی زخمی؟

زبیر کی فائرنگ سے مصطفی زخمی؟

پولیس 16 گھنٹوں بعد بھی لا علم
حیدرآباد ۔ 11 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : سائبر آباد کے علاقہ کنگ کولونی میں رات دیر گئے پیش آئے فائرنگ کے واقعہ میں ایک شخص شدید زخمی ہوگیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ کنگ کولونی میں واقع فام ہاوز پر ایک تقریب کے دوران جمعہ کی رات تقریبا 3 بجے یہ واقعہ پیش آیا ۔ جس میں مصطفی نامی نوجوان شدید زخمی ہوگیا ۔ جس کے پیٹھ میں گولی لگی ۔ تاہم فوری طور پر زخمی شخص کو بنجارہ ہلز کے ایک ہاسپٹل میں شریک کردیا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اس کی حالت کو تشویشناک قرار دیا ۔ باوثوق ذرائع کے مطابق مصطفی کے پیٹھ میں قریب سے گولی ماری جس کے سبب وہ شدید زخمی ہوگیا ۔ یہ واردات جہاں پیش آئی تاحال اس کی نشاندہی نہیں ہوپائی ۔ زبیر نامی شخص پر فائرنگ کا الزام پایاجاتا ہے جو نشہ کی حالت میں چور تھا اور ایسی حرکتوں کے لیے وہ مشہور بھی ہے ۔ واقعہ کی اطلاع کے فوری بعد مائیلا دیو پلی پولیس حرکت میں آگئی اور کارروائی کا آغاز کیا ۔ تاہم شام تک بھی یعنی 16 گھنٹے بعد بھی پولیس کو فائرنگ کی وجوہات کا پتہ نہ چل سکا ۔ اور نہ ہی پولیس جائے واردات کے مقام کا پتہ چلا سکی ۔ رقمی لین دین اور اراضی تنازعہ فائرنگ کی اصل وجہ بتایا جارہا ہے ۔ تلگو کے نیوز چینل وی سیکز اور ٹی وی نائن پر بتایا گیا کہ زبیر اور مصطفی میں تنازعہ چل رہا تھا اور اس دوران گذشتہ 5 تا 6 ماہ سے وہ دور تھے اور چند روز قبل سے وہ دوبارہ قریب ہوئے اور خوشگوار تعلقات پیدا ہوگئے تھے تاہم کل رات ایک تقریب میں مصطفی کو طلب کیا گیا اور دوبارہ دونوں میں بات چیت بحث و تکرار ہوئی اور اس دوران زبیر نے مصطفی پر دو راونڈ فائرنگ کردی ۔ ایک گولی نشانہ سے چوک گئی جب کہ ایک زبیر کے پیٹھ میں داخل ہوگئی ۔ وی سیکز نیوز چینل پر بتایا گیا کہ مصطفی پر زبیر کافی برہم تھا اور آئی ٹی کے دھاوے کی اصل وجہ مصطفی ہی کو مانتا تھا ۔ اور ساری کارروائی کے پیچھے اس کے رول کا شبہ تھا اور پرانی خصومت بھی ختم نہیں ہوئی تھی جس کے سبب زبیر رات دیر گئے آپے سے باہر ہوگیا اور حملہ کردیا ۔ تاہم تعجب کی بات تو یہ ہے کہ پولیس مائیلا دیو پلی نے حملہ آور کا نام بتانے سے گریز گن کلچر جرائم پر قابو پانے کے اقدامات کے بلند بانگ دعوے کرنے والی پولیس کی کارروائی شبہات کا سبب بنی ہوئی ہے اور واقعہ کے 16 گھنٹے گذرنے کے باوجود بھی پولیس خاطی کو دور اس کی نشاندہی کرنے سے بھی قاصر رہی ۔ اطلاعات کے بعد فائرنگ میں زخمی مصطفی کی حالت خطرے سے باہر بتائی گئی ہے تاہم گولی کے اثرات اس کی صحت پر خطرناک اثرات چھوڑ سکتے ہیں اور زندگی بھر اس نوجوان کی صحت کو خطرہ لاحق ہوسکتا ہے ۔ تلگو نیوز چینل کے مطابق حملہ آور زبیر نے لائسنس یافتہ بندوق سے فائرنگ کی ۔ تاہم یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ زبیر کی جانب سے فائرنگ یہ کوئی نیا واقعہ نہیں اس سے قبل بھی فائرنگ کے واقعات میں ملوث ہے ۔ باوجود اس کے پولیس کے اقدامات شبہات کا سبب بنا ہوا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT