Saturday , September 22 2018
Home / اضلاع کی خبریں / زرعی مارکٹ کمیٹی عادل آباد کے دو عہدیدار معطل

زرعی مارکٹ کمیٹی عادل آباد کے دو عہدیدار معطل

’ تور ‘ دال کی خرید و فروخت میں دھاندلیوں کے انکشاف پر کارروائی

عادل آباد ۔ 14 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز ) : مستقر عادل آباد کے محکمہ زرعی مارکٹ کمیٹی کے دو عہدیداروں کو ’ تور ‘ خرید و فروخت کی دھاندلیوں میں ملوث قرار دیتے ہوئے ضلع کلکٹر شریمتی دیویا دیوراجن نے مارکٹ کمیٹی سکریٹری مسٹر اڈیلو ، سپروائزر مسٹر سید اعظم علی کو ان کی خدمات سے معطل کردیا ۔ ضلع کلکٹر نے کل شام احکام کی اجرائی عمل میں لائی ۔ تفصیلات کے مطابق ضلع عادل میں کاٹن تجارت کے بعد دوسرے درجہ میں تور کا مارکٹ تصور کیا جاتا ہے ۔ زراعت پیشہ افراد سے تور کی خریدی محکمہ مارکفیڈ کیا کرتا ہے تور کی خاطر خواہ قیمت کو تصور کرتے ہوئے مقامی تجارت پیشہ افراد پڑوسی ریاست مہاراشٹرا سے کم قیمت پر تور حاصل کرتے ہوئے زرعی مارکٹ کمیٹی کے تحت مارکفیڈ کو فروخت کیا کرتے ہیں ۔ گذشتہ چند سال سے جاری اس سلسلہ کے پیش نظر مختلف ذرائع سے ملنے والی شکایتوں کو ملحوظ رکھتے ہوئے جوائنٹ کلکٹر مسٹر کرشنا ریڈی ، آر ڈی او سوریا نارائنا نے مستقر عادل آباد کے علاوہ یوتھ اچوڑہ ، گوڑی تہنور ، تلامڈگو کے منڈل جات میں بھی دھاوا کرتے ہوئے گوداموں کو مقفل کیا ۔ جس میں زائد از دو ہزار کنٹل تور کا ذخیرہ پایا گیا جس کے بنا پر تور محفوط رکھنے والے تجارت پیشہ افراد کے خلاف غیر مجاز ذخیرہ اندوزی کا کیس درج جہاں ایک طرف کیا گیا وہیں دوسری طرف تور خرید و فروخت کی دھاندلیوں میں ملوث قرار دیتے ہوئے مارکٹ کمیٹی سکریٹری مسٹر اڈیلو ، سپروائزر مسٹر سید اعظم علی ، مارکفیڈ ، ڈی ایم جی ناگیشور کو ان کی خدمات سے معطل کرنے کی سفارش بھی کی گئی ۔ غیر سرکاری ذرائع سے ملنے والی اطلاع کے مطابق ’ تور ‘ خرید و فروخت میں زرعی مارکٹ کمیٹی عہدیدار کو اور مارکفیڈ عہدیدار کو فی کنٹل پر 100 روپئے رشوت دی جاتی تھی ۔ ضلع کلکٹر نے زرعی مارکٹ کمیٹی کے دو عہدیداروں کو ان کی خدمات سے معطل کرنے کے جہاں ایک طرف احکام کی اجرائی عمل میں لائی وہیں دوسری طرف مارکفیڈ اعلیٰ عہدیداروں کو مقامی ڈی ایم کو معطل کرنے کی سفارش کی ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT