زوپارک کے داخلہ فیس میں اضافہ ،عوام میں ناراضگی

حیدرآباد۔2 اپریل (سیاست نیوز) شہر حیدرآباد میں ویسے تو تفریح کے کئی مقامات موجود ہیں لیکن نہرو زوالیجکل پارک (عوام جسے زوکے نام سے جانتی ہے )کی اپنی ایک انفرادی شناخت ہے لیکن اب یہاں تفریح بھی مہنگی ہوچکی ہے۔ یکم اپریل سے زو کے داخلہ فیس میں اضافہ کردیا گیا ہے ۔ داخلے کی فیس کے لیے بچوں اور بڑوں کی ٹکٹ پر فی کس 5 روپے اضافہ کردیا گیا ہے جس کے بعد اب زوکو تفریح کے لئے جانے والوں کو پانچ پانچ روپے کا اضافہ خرچ برداشت کرنا پڑے گا۔ اضافہ شدہ فیس کے بعد اب 35 روپے کی بجائے 40 روپے اور ہر بچے کو 20 روپے کی بجائے 25 روپے فیس ادا کرنی ہوگی اس کے علاوہ بیٹری سے چلنے والی گاڑی جس کی فیس 55 روپے تھی اب اسے 60 روپے کردی گئی ہے۔ اسی طرح اس گاڑی میں سفر کرنے کے لیے فیس جو پہلے بچے سے 35 روپے لی جاتی تھی اب اسے 40 روپیہ کردیا گیا ہے ۔مچھلیوں کے اکویریم کی فیس بھی پانچ روپے سے بڑھا کر دس روپے کر دی گئی ہے ۔ انیمال ہاوس کی فیس بھی 15 سے 20 روپے کر دی گئی ہے ۔سفاری رائیڈ بھی اب مہنگی ہوگئی کیونکہ اسے 45 روپے سے بڑھا کر 50 روپے کر دیا گیا ہے جبکہ بچوں کیلئے یہ 25 سے 30 روپے کر دی گئی ہے۔افراد خاندان کے ساتھ یہاں پہنچے مسٹر عبدالوحید نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ زوپارک صرف ایک تفریحی مقام نہیں ہے بلکہ پچوں کیلئے یہ معلوماتی زاویوں سے کافی اہم مقام ہے لیکن حکومت کی جانب سے اس کے داخلے فیس کیلئے علاوہ اندر دیگر مقامات کی سیر وتفریح کی فیس میں اضافہ بہتر فیصلہ نہیں ہے۔خاص کر اب چونکہ گرمائی تعصیلات کا آغاز ہونے والا ہے اور عوام کی ایک بڑی تعداد زوپارک کا رخ کرتی ہے لہذا یہ اضافی فیس انکے لئے مایوسی کا باعث بنتی ہے۔

TOPPOPULARRECENT