Tuesday , November 21 2017
Home / جرائم و حادثات / ساؤتھ زون پولیس پرانے شہر میں چبوترہ مہم کا دوبارہ آغاز کریگی

ساؤتھ زون پولیس پرانے شہر میں چبوترہ مہم کا دوبارہ آغاز کریگی

خواتین سے چھیڑ چھاڑ پر فوجداری مقدمات درج کرنے کا انتباہ ۔ ڈی سی پی ساؤتھ زون ایم ستیہ نارائنا کا بیان

محمد علیم الدین
حیدرآباد 15 اگسٹ :ساؤتھ زون پولیس ڈی سی پی مسٹر ستیہ نارائنا کی قیادت میں ایک بار پھر پرانے شہر میں چبوترہ مہم شروع کر رہی ہے تاکہ رات دیر گئے تک سڑکوں پر بے مقصد وقت گذاری کرنے اور محلوں و بستیوں میں سرگرم رہنے والے نوجوانوں کے خلاف کارروائی کی جاسکے ۔ ماہ رمضان المبارک سے قبل ساؤتھ زون پولیس نے چبوترہ مہم شروع کی تھی اور رات دیر گئے تک سڑکوں پر بے مقصد گھومنے اور ہوٹلوں و پان شاپس پر وقت گذاری کرتے ہوئے محلے و بستیوں کے مکینوں کیلئے مسائل پیدا کرنے والے نوجوانوں کے خلاف کارروائی کی تھی ۔ ان نوجوانوں کو راتوں میں حراست میں لیتے ہوئے کسی ایک شادی خانہ کو منتقل کیا جا رہا تھا اور صبح میں ان کے والدین کو طلب کرتے ہوئے ان نوجوانوں کی کونسلنگ کی جا رہی تھی ۔ نوجوانوں سے کہا جا رہا تھا کہ وہ رات دیر گئے تک گھروں سے باہر نہ رہیں اور بے مقصد وقت گذاری سے گریز کریں۔ پولیس نے والدین کو بھی مشورہ دیا تھا کہ وہ اپنے بچوں پر کنٹرول کریں اور انہیں راتوں میں گھروں سے باہر نکلنے کی اجازت نہ دیں ۔ پولیس کی جانب سے کونسلنگ کیلئے کچھ مذہبی اور ذی اثر شخصیتوں کی خدمات بھی حاصل کی گئی تھیں جن کے ذریعہ نوجوانوں کی کونسلنگ کروائی گئی تھی ۔ جس وقت ساؤتھ زون پولیس نے یہ مہم شروع کی تھی اس کا سماج کے مختلف گوشوں کی جانب سے خیر مقدم کیا گیا تھا ۔ حالانکہ کچھ سرپرستوں نے اس مہم پر ناراضگی بھی ظاہر کی تھی لیکن بحیثیت مجموعی اس پر مثبت رد عمل ہی سامنے آیا تھا ۔ ڈی سی پی ساؤتھ زون مسٹر ستیہ نارائنا نے بتایا کہ پرانے شہر میں اس مہم کے مثبت اثرات سامنے آ رہے تھے اور ایک بار پھر پرانے شہر کے عوام اور کچھ والدین نے پولیس سے اس مہم کی شروعات کی خواہش ظاہر کی تھی ۔ خاص طور پر دو دن قبل تالاب کٹہ علاقہ میں ایک 12 سالہ لڑکی کے پر اسرار اغوا اور قتل کے بعد عوام کی جانب سے پولیس پر دباؤ میں اضافہ ہوگیا ہے کہ وہ ایک بار پھر چبوترہ مہم شروع کرے۔ انہوں نے بتایا کہ عوام کے دباؤ اور سابق میں چلائی گئی مہم کو دیکھتے ہوئے ساؤتھ زون پولیس نے ایک بار پھر چبوترہ مہم کے آغاز کا فیصلہ کیا ہے جو کسی بھی وقت شروع ہوسکتی ہے ۔ ڈی سی پی ساؤتھ زون نے بتایا کہ پولیس راتوں میں بے مقصد سڑکوں پر گھومنے والے ‘ چبوتروں پر وقت گذاری کرنے والے اور ہوٹلوں و پان شاپس پر جمع ہونے والے نوجوانوں کے خلاف یہ مہم شروع کریگی اور انہیںحراست میں لے کر کونسلنگ کی جائیگی ۔ انہوں نے یہ بھی واضح کردیا کہ جو نوجوان راہگیروں اور خاص طور پر خواتین سے چھیڑ چھاڑ میں ملوث ہوں اور دوسروں کیلئے مسائل کا باعث بن رہے ہوں ان کو باضابطہ گرفتار کیا جائیگا اور ان کی کونسلنگ کرنے کی بجائے ان کے خلاف مقدمات درج کردئے جائیں گے ۔ڈی سی پی نے عوام اور خاص طور پر والدین سے اپیل کی کہ وہ اپنے بچوں پر توجہ دیں اور انہیں رات دیر گئے تک گھروں سے باہر رہنے سے باز رکھیں۔ انہوں نے بتایا کہ پولیس کی اس کارروائی کا مقصد عوام کو پرسکون زندگی گذارنے کا موقع فراہم کرنا ہے اور اس کیلئے پولیس مسائل پیدا کرنے والوں کے خلاف کسی بھی طرح کی کارروائی سے گریز نہیں کریگی ۔

TOPPOPULARRECENT