Friday , December 15 2017
Home / جرائم و حادثات / سائبرآباد پولیس حدود میں رہزنی و سرقہ کی وارداتوں میں اضافہ

سائبرآباد پولیس حدود میں رہزنی و سرقہ کی وارداتوں میں اضافہ

جدید آلات و ٹکنالوجی کے باوجود واقعات سے پولیس پر سوالیہ نشان
حیدرآباد /15 ستمبر ( سیاست نیوز ) سائبرآباد پولیس کمشنریٹ حدود میں سرقہ و رہزنی اور سرقہ کی وارداتوں میں دن بہ دن اضافہ ہوتا جارہا ہے ۔ خواتین کے گلے سے چین چھینے کے واقعات میں تشویش ناک حد تک اضافہ کی بعد اب مقفل مکانات و دوکانات سارقوں کا نشانہ بن گئے ہیں ۔ کل ایل بی نگر اور سرور نگر میں رہزنی کی وارداتوں کے بعد آج جواہر نگر اور گچی باؤلی میں وارداتیں پیش آئیں ۔ سرقہ و رہزنی کی وارداتوں سے سائبرآباد کی کارکردگی بے فیض ثابت ہورہی ہے ۔ حالانکہ سائبرآباد پولیس بہتر کارکردگی کا دعوی کرتے ہوئے جدید آلات اور ٹکنالوجی کا بھی استعمال کر رہی ہے ۔ تاہم سرقہ و رہزنی کی وارداتوں میں اضافہ سے پولیس کی کارکردگی پر سوالیہ نشان لگ گیا ہے ۔ جواہر نگر پولیس کے مطابق بی این ریڈی نگر میں یہ واردات رات دیر گئے پیش آئی جہاں ایک زیورات کی دوکان میں نقب زنی کے ذریعہ سونے اور چاندی کے زیورات کا سرقہ کرلیا گیا ۔ تاہم مسروقہ سامان کی مالیت کا تاحال پولیس نے اندازہ نہیں لگایا اور بتانے سے گریز کیا ۔ گچی باؤلی کے علاقہ میں ایک اپارٹمنٹ کے فلیٹ میں سرقہ کی واردات پیش آئی ۔ ذرائع کے مطابق ایک سافٹ ویر انجینئیر کے مکان میں سرقہ کرلیا گیا ۔ اس نے اپنے فلیٹ کو مقفل کرنے کے بعد مارکٹ کا رخ کیا تاہم جب ایک گھنٹہ بعد وہ مکان واپس آئی تو اس کو پتہ چلاکہ اس کے مکان میں سرقہ کرلیا گیا ۔ پولیس نے انجینئیر کی شکایت پر مقدمہ درج کرلیا ہے اور مصروف تحقیقات ہے ۔

TOPPOPULARRECENT