Wednesday , December 13 2017
Home / دنیا / سابق صدر سری لنکا راجہ پکسے کا بیٹا احتجاجی مظاہرہ کے دوران گرفتار

سابق صدر سری لنکا راجہ پکسے کا بیٹا احتجاجی مظاہرہ کے دوران گرفتار

کولمبو۔ 11 اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام) سری لنکا کے سابق صدر مہندا راجہ پکسے کے بڑے بیٹے کو دیگر دو ارکان پارلیمان کے ساتھ ہمبنٹوٹا میں واقع ہندوستانی سفارت خانہ کی عمارت کے روبرو احتجاجی مظاہرہ کرنے کی پاداش میں گرفتار کرلیا گیا۔ احتجاج ایک سری لنکائی ایرپورٹ کو ایک ہندوستانی کمپنی کو مجوزہ لیز پر دینے کے خلاف منظم کیا گیا تھا۔ راجہ پکسے کے دور صدارت میں یہ ایک اہم ترین انفراسٹرکچر پراجیکٹ تھا جس کے لئے چین سے بھی خطیر رقمی قرض حاصل کیا گیا تھا۔ گزشتہ شب ہمبنٹو ٹاپولیس نے نمل راجہ پکسے اور دیگر 6 احتجاجیوں کو سمن جاری کرتے ہوئے طلب کیا تھا تاکہ احتجاج کے دوران پھوٹ پڑنے والے تشدد سے متعلق ان کے بیانات ریکارڈ کئے جائیں۔ ان پر یہ بھی الزام ہے کہ انہوں نے عوامی املاک کو نقصان پہنچایا، غیرقانونی طور پر مجمع کیا اور ہمبنٹو ٹا جوڈیشیل علاقہ میں کوئی احتجاج منظم نہ کرنے عدالت کے حکم کے باوجود حکم کی خلاف ورزی کی۔ پولیس نے بتایا کہ تمام افراد کو ہمبنٹوٹا مجسٹریٹ کے اجلاس پر پیش کیا گیا جہاں سے انہیں 16 اکتوبر تک ٹنگالے جیل بھیج دیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT