Friday , November 24 2017
Home / ہندوستان / سابق عام آدمی پارٹی لیڈر انجلی دامنیا کی بھوک ہڑتال

سابق عام آدمی پارٹی لیڈر انجلی دامنیا کی بھوک ہڑتال

مہاراشٹرا کے وزیر مالگذاری کے خلاف الزامات کی تحقیقات کا مطالبہ
ممبئی ۔ 2 ۔ جون : ( سیاست ڈاٹ کام ) : عام آدمی پارٹی کی سابق لیڈر انجلی دامنیا نے مہاراشٹرا کے وزیر مالگذاری ایکناتھ کھڈسے کے خلاف کرپشن کے الزامات کی تحقیقات اور کابینہ سے ان کی بیدخلی کے مطالبہ پر آج سے بھوک ہڑتال کا آغاز کردیا ہے ۔ دامنیا نے کل سماجی کارکن انا ہزارے سے ملاقات کر کے آشیرواد حاصل کیا تھا اور آج آزاد میدان پہنچ کر بھوک ہڑتال کا آغاز کردیا ۔ انہوں نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ بدعنوان وزیر کے خلاف اندرون 6 ماہ تحقیقات مکمل کر کے فاسٹ ٹریک کورٹ سے کیس رجوع کیا جائے ۔ شریمتی دامنیا نے بتایا کہ کھڈسے کے خلاف کئی ایک الزامات ہیں اور حکومت کو اس خصوص میں کارروائی کرنی چاہئے اور میں نے اناہزارے سے ملاقات کر کے کھڈسے کے خلاف دستاویزات پیش کیں جس پر اناہزارے نے کہا کہ یہ تو سنگین معاملہ ہے اور یہ تیقن دیا کہ بہت جلد وہ چیف منسٹر سے نمائندگی کریں گے جب کہ بھوک ہڑتال کے مقصد میں کامیابی کے لیے آشیرواد بھی دیا گیا ۔ شریمتی انجلی نے کہا کہ ان کی بھوک ہڑتال اس وقت تک جاری رہے گی تاوقتیکہ چیف منسٹر یہ تحریری تیقن نہ دیں کہ اندرون 6 ماہ کھڈسے کے خلاف تحقیقات مکمل کری جائیں گی ۔ انہوں نے یہ بھی الزام عائد کیا کہ وزیر موصوف کے داماد نے آر ٹی اے کی اجازت کے بغیر اپنی لیموسن کار میں تبدیلی لائی ہے جو کہ قواعد کی خلاف ورزی ہے ۔ علاوہ ازیں یہ بھی الزام ہے کہ انڈر ورلڈ ڈان داؤد ابراہیم کی قیام گاہ سے کھڈسے کو فون آیا تھا ۔ سابق عام آدمی پارٹی لیڈر نے بتایا کہ جب بھی کرپشن کے معاملت حکومت سے رجوع کئے جاتے ہیں عدالت سے رجوع ہونے کا مشورہ دیا جاتا ۔ جب کہ میں نے کئی ایک مسائل پر عدالت میں مفاد عامہ کی درخواستیں پیش کی ہیں لیکن حکومت کرپشن کے خلاف کارروائی کرنے کی بجائے چشم پوشی اختیار کئے ہوئے ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT