Wednesday , December 13 2017
Home / ہندوستان / سابق نائب صدر کی بیوی کے زیرانتظام

سابق نائب صدر کی بیوی کے زیرانتظام

دینی مدرسہ کے واٹرکولر میں سفوف ، سانحہ ٹل گیا
علیگڑھ ۔18 ستمبر۔( سیاست ڈاٹ کام) ایک دینی مدرسہ کے چوکس آٹھویں جماعت کے طلبہ نے ایک بڑے سانحہ کو ٹالنے میں کامیابی حاصل کرلی ۔ انھوں نے پرنسپال کو اطلاع دی کہ چوہے مارنے کا زہر مبینہ طورپر مدرسہ کے واٹر کولر میں نامعلوم افراد نے ملادیا ہے ۔ چاچا نہرو مدرسہ کے ایک لڑکے نے دیکھا تھا کہ چند لوگ واٹر کولر کا ڈھکن ہٹاکر اس میں سفید رنگ کے سفوف کی ایک پاکٹ جس پر ’’چوہے مار زہر ‘‘ تحریر تھا خالی کررہے ہیں۔ اس سلسلے میں راشد علی نے اسکول کے پی آر او کے پاس ایک شکایت بھی درج کروائی ۔ شرارت کے اندیشے کے تحت 13 سالہ لڑکا پرنسپال کے دفتر میں پہونچا اور انھیں اس واقعہ کی اطلاع دی ۔ پولیس کے بموجب دو افراد لڑکے نے یہ کارروائی کرتے ہوئے دیکھے ۔ انھوں نے اسے دھمکی دی تھی کہ اگر وہ اُن کے فرار سے پہلے اپنا منہ کھولے گا تو اُسے گولی مارکر ہلاک کردیں گے ۔ انھوں نے ایک پستول بھی نکال لیا تھا ۔ پولیس کی ایک ٹیم جو مدرسہ پہونچی تھی اُسے پھینکے ہوئے پاکٹ کی باقیات دستیاب ہوئی جس میں تھوڑی سی مقدار میں چوہے کو مارنے کا زہر اب بھی موجود تھا ۔ یہ اسکول بدر باغ میں واقع ہے جو علیگڑھ مسلم یونیورسٹی کے احاطہ سے متصل ہے ۔ ربط پیدا کرنے پر سابق نائب صدر محمد حامد انصاری کی بیوی سلمیٰ انصاری نے کہاکہ اُنھیں بے قصور بچوں کو نقصان پہونچانے کی اس حرکت پر صدمہ پہونچا ہے ۔ تحقیقاتی عہدیدار جاوید خان نے کہاکہ فارنسک جانچ کروائی گئی تاکہ سفید سفوف کی حقیقت معلوم ہوسکے ۔ مقامی ایس پی اتل سریواستو نے کہا کہ تحقیقات جاری ہیں۔

 

TOPPOPULARRECENT