Monday , February 26 2018
Home / Top Stories / سابق وزیراعظم خالدہ ضیاء کو 5 سال کی جیل

سابق وزیراعظم خالدہ ضیاء کو 5 سال کی جیل

رشوت کیس میں فرزند طارق رحمن اور دیگر کو 10 سال کی سزا
ڈھاکہ ۔ 8 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) بنگلہ دیش کی سابق وزیراعظم اور اپوزیشن پی این پی سربراہ خالدہ ضیاء کو آج رشوت کیس میں پانچ سال کی جیل کی سزاء دی گئی۔ 72 سالہ خالدہ ضیاء کو بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاکہ میں خصوصی عدالت 5 کی جانب سے یہ سزاء سنائی گئی۔ ان پر الزام تھا کہ انہوں نے بیرونی عطیات کی شکل میں 21 ملین ٹکا (252000 امریکی ڈالر) روپئے ضیا یتیم خانہ ٹرسٹ کیلئے حاصل کئے تھے۔ اس کیس میں خالدہ ضیاء کے فرزند طارق رحمن اور دیگر چار کو 10 سال کی جیل کی سزاء سنائی گئی ہے۔ سابق وزیراعظم 30 نومبر 2014ء کو اپنی آخری کوشش میں ناکام ہوئی تھیں وہ رشوت ستانی کیس سے بچنے کی کوشش کرتی رہیں لیکن سپریم کورٹ نے سزاء کو چیلنج کرتے ہوئے داخل کردہ اپیل کو دوسری مرتبہ بھی مسترد کردیا تھا اور ان سے کہا تھا کہ وہ تحت کی عدالت میں مقدمہ کا سامنا کرلیا۔ قبل ازیں ہائیکورٹ نے 14 مارچ 2014ء میں تحت کی عدالت کے فیصلہ کی توثیق کی تھی اور خالدہ ضیاء پر رشوت ستانی کے دو الزامات کو درست قرار دیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT