Wednesday , September 19 2018
Home / اضلاع کی خبریں / سابق وزیر بابو موہن تلگودیشم سے مستعفی

سابق وزیر بابو موہن تلگودیشم سے مستعفی

سنگاریڈی 24 مارچ ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) ضلع میدک میں تلگودیشم پارٹی کو آج اس وقت شدید دھکہ لگا جب سینئیر تلگودیشم قائد و سابق وزیر پی بابو موہن نے تلگودیشم پارٹی سے مستعفی ہونے کا اعلان کیا ۔بابو موہن نے تلگودیشم پارٹی سربراہ چندرا بابو نائیڈو کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ علاقہ تلنگانہ میں تلگودیشم پارٹی کی غلط پالیسیوں نے

سنگاریڈی 24 مارچ ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) ضلع میدک میں تلگودیشم پارٹی کو آج اس وقت شدید دھکہ لگا جب سینئیر تلگودیشم قائد و سابق وزیر پی بابو موہن نے تلگودیشم پارٹی سے مستعفی ہونے کا اعلان کیا ۔بابو موہن نے تلگودیشم پارٹی سربراہ چندرا بابو نائیڈو کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ علاقہ تلنگانہ میں تلگودیشم پارٹی کی غلط پالیسیوں نے انہیں تلگو دیشم سے مستعفی ہونے پر مجبور کردیا ۔ فلمسٹار بابو موہن نے 1988 کے ضمن میں انتخابات میں حلقہ اسمبلی اندول سے پہلی مرتبہ کامیابی حاصل کی اور اس کے بعد 1999 میں منعقدہ عام انتخابات میں دوبارہ کامیابی حاصل کی اور چندرا بابو نائیڈو کابینہ میں وزیر لیبر کی حیثیت سے خدمات انجام دی ۔ سال 2004 اور 2009 کے انتخابات میں شکست ہوئی ۔ اس کے باوجود بابو موہن حلقہ اسمبلی اندول سے جڑے رہے ۔گذشتہ کچھ عرصہ سے بابو موہن اور ضلع پارٹی قائدین کے درمیان اختلاف رونما ہوئے اور بتایا جاتا ہے کہ تلنگانہ تلگودیشم پارٹی فورم کنوینر ای دیاکر راؤ کے بھتیجے مدن موہن راؤ جو حلقہ پارلیمنٹ ظہیرآباد انچارج پریشد امیدواروں کے بی فارم بابو موہن کو نہیں دئے گئے جس پر بابو موہن نے استعفی دے دیا ۔ سیاسی واقف کاروں کا کہنا ہے کہ بابو موہن دراصل تلگودیشم پارٹی کو چھوڑنے کا بہانہ تلاش کر رہے تھے ۔ جو انہیں مل گیا بتایا جاتا ہیکہ 26 مارچ کو جوگی پیٹ میں منعقد شدنی ٹی آر ایس پارٹی جلسہ عام میں کے سی آر کی موجودگی میں بابو موہن ٹی آر ایس پارٹی میں شمولیت اختیار کریں گے اور ٹی آر ایس ٹکٹ پر حلقہ اسمبلی اندول سے مقابلہ کریں گے ۔

TOPPOPULARRECENT