Thursday , January 17 2019

ساتویں جماعت کے طالب علم محمد حسان علی بے پناہ صلاحیتوں کا حامل

متعدد ایوارڈس کا حصول،30 انجینئرنگ طلبہ کو تربیت، جناب زاہدعلی خان ایڈیٹر سیاست کی نیک تمنائیں

حیدرآباد 9 ڈسمبر (سیاست نیوز) اللہ تبارک و تعالیٰ نے دنیا میں کسی بھی چیز کو بے مقصد و بغیر کسی خصوصیت کے پیدا نہیں فرمائی ہے تو پھر انسان جو اشرف المخلوقات ہے اسے بدرجہ اتم بے شمار خصوصیات کا حامل بناکر پیدا فرمایا ہے۔ الغرض اللہ تعالیٰ نے ہر ایک انسان کو کسی نہ کسی خصوصیت سے متصف فرمایا ہے۔ بشرطیکہ انسان اپنی اس خصوصیت کی شناخت کرکے اس میدان میں آگے بڑھنے کی سعی کرے تو بعید نہیں کہ دنیا اس کے قدم چومے گی۔ کہا جاتا ہے کہ بچے سچے اور اللہ کے پیارے ہوتے ہیں اور بقول شاعر ذرا نم ہو تو یہ مٹی بڑی زرخیز ہے ساقی کے مطابق ان بچوں کے اندر موجود صلاحیتوں کا بروقت اندازہ لگاکر انھیں بروئے کار لایا جائے تو وہ اپنے میدان کے شہسوار بن سکتے ہیں جس کی مثال پرانے ملک پیٹ حیدرآباد سے تعلق رکھنے والے انٹگرل فاؤنڈیشن اسکول میں ساتویں جماعت کے 12 سالہ طالب علم محمد حسان علی بن محمد صادق علی ہیں جنھوں نے اس چھوٹی سی عمر میں ہی انٹرنیٹ کے ذریعہ ڈیزائننگ میں اتنی مہارت حاصل کرلی ہے کہ ساتویں جماعت میں زیرتعلیم رہتے ہوئے بھی باقاعدہ شام 5.30 تا رات 8 بجے تک تقریباً 30 انجینئرنگ کالجس کے طلبہ کو ڈیزائننگ میں تربیت دے رہے ہیں یعنی انھوں نے اسکل انڈیا لرن کریٹ اینڈ ایجوکیٹ انسٹی ٹیوٹ فار سیول میکانیکل الیکٹریکل اینڈ کمپیوٹر انجینئرس کے نام سے انسٹی ٹیوٹ کا آغاز کرکے لرن آٹو کیاڈ 2D ، 3D ، ریوٹ آرکیٹکچر، ایم ای پی، اسٹاڈپرو، ایٹاب، کوانٹیٹی سروے کے علاوہ شعبہ انجینئرنگ کے تعلق رکھنے والے مختلف کورسیس میں انجینئرنگ کے طلبہ کو پڑھارہے ہیں جنھوں نے آج روزنامہ سیاست کے ایڈیٹر جناب نواب زاہد علی خان صاحب سے دفتر سیاست پہونچ کر ملاقات کی اور اس موقع پر ایڈیٹر سیاست نے اس معصوم بچے کو ڈھیر ساری دعائیں دیتے ہوئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔ بعدازاں محمد حسان علی نے سیاست نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ اس کا نشانہ 2020 ء تک ایک لاکھ انجینئرس کو ان کے شعبہ میں ماہر بنانا ہے۔ محمد حسان نے اس مصروفیت کی وجہ سے اپنی اسکولی تعلیم میں خلل ہونے کے سوال پر بتایا کہ وہ اسکول کے ممتاز طالب علم ہیں اور تعلیم میں کوئی خلل واقع نہیں ہورہا ہے۔ محمد حسان علی نے تعلیم یافتہ طبقات سے اپیل کی کہ وہ معاشرے کے غریب بچوں کو زیور تعلیم سے آراستہ کرنے کے لئے اپنے قیمتی اوقات سے چند گھنٹے مختص کریں اور ساتھ ہی حکومتوں سے بھی خواہش کی کہ ملک میں انقلاب لانے کے لئے تعلیم کو نہ صرف عام بلکہ مفت تعلیم کا آغاز کریں تاکہ ملک کا غریب سے غریب طالب علم بھی میدان علم کا شہسوار بن کر ملک کو ترقی کی جانب گامزن کرسکے۔ واضح ہوکہ محمد حسان علی کی قابلیت کو دیکھتے ہوئے کئی قومی اداروں نے انھیں ایوارڈس سے نوازا ہے جیسے کریسنٹ یونیورسٹی چینائی، ای ایس سی آئی گچی باؤلی حیدرآباد کے علاوہ اور بھی ہیں جبکہ AFMI پٹنہ بہار کی جانب سے بھی عنقریب ایوارڈ عطا کیا جانے والا ہے اور بڑی مسرت کی بات یہ ہے کہ کنگ سعود یونیورسٹی سعودی عرب کی جانب سے بھی انھیں بذریعہ ای میل ایوارڈ کی پیشکشی کی اطلاع دی گئی ہے۔ محمد صادق علی نے کہاکہ معاشرے میں مجھ سے زیادہ ذہین اور ہوشیار طلبہ و طالبات ہیں لہذا والدین اور اساتذہ کو چاہئے کہ ان کی خصوصیات اور قابلیتوں کا بروقت اندازہ لگاتے ہوئے انھیں ان میدانوں کے شہسوار بنائیں۔ واضح ہوکہ حالیہ دنوں میں منعقدہ امتحان کمپیوٹر ایڈیڈ ڈرافٹنگ انجینئرنگ امتحان میں شرکت کرتے ہوئے فرسٹ رینک حاصل کیا ہے جبکہ اس امتحان میں شرکت کیلئے ان کی عمر رکاوٹ بن رہی تھی مگر ان کی قابلیت کو دیکھتے ہوئے حد عمر میں چھوٹ دی گئی تھی جبکہ اس امتحان میں انجینئرنگ کے 500 سے زائد طلبہ شریک تھے جن میں محمد حسان علی نے فرسٹ رینک حاصل کیا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT