Monday , January 22 2018
Home / شہر کی خبریں / سارقوں کے نام پر برقع پوش خواتین کی تصاویر

سارقوں کے نام پر برقع پوش خواتین کی تصاویر

پولیس سے توجہ دہانی کے باوجود لاپرواہی ، کمشنر پولیس سے شکایت

پولیس سے توجہ دہانی کے باوجود لاپرواہی ، کمشنر پولیس سے شکایت
حیدرآباد۔20 جولائی (سیاست نیوز) چارمینار تا مدینہ بلڈنگ خریداروں کو چوروں سے چوکنا کرنے کے لئے نصب کردہ بیانرس پر برقع پوش خواتین کی تصاویر شائع کئے جانے کے خلاف مہر آرگنائزیشن کی جانب سے کمشنر پولیس حیدرآباد مسٹر ایم مہیندر ریڈی کو روانہ کردہ ایک یادداشت میں فوری محکمہ پولیس کی جانب سے لگائے گئے بیانرس کو ہٹانے کی خواہش کی گئی ہے۔ چارمینار تک مدینہ بلڈنگ لگائے گئے فلیکسوں میں برقع پوش خواتین کو بطورِ چور پیش کیا گیا جو خواتین ہی کے پرسوں سے قیمتی اشیاء اور رقم سرقہ کرنے کی کوشش کررہی ہیں۔ عوام میں ان بیانرس میں شائع شدہ نقاب پوش برقع زیب تن کی ہوئی خواتین کی تصاویر پر شدید اعتراض کیا جارہا ہے اور پولیس کی توجہ مبذول کروانے کی بارہا کوشش کروائی جاچکی ہے۔ عوام کا یہ احساس ہے کہ یقیناً تمام طبقات میں اچھے اور بُرے افراد ہوتے ہیں لیکن جس انداز سے برقع پوش خواتین بطور سارق تشہیر کی جارہی ہے، اس سے ایسا محسوس ہورہا ہے کہ محکمہ پولیس میں موجود بعض متعصب ذہنیت کے حامل عہدیدار دانستہ طور پر اس طرح کی کوشش کررہے ہیں۔ علاوہ ازیں محکمہ کی جانب سے مسلمہ چوروں کی تصاویر کے بیانرس بھی نصب کئے گئے ہیں لیکن ان بیانرس پر موجود تصاویر ناقابل دید ہیں بلکہ اُن سارقین کی شناخت ہی دشوار نظر آتی ہے۔ علاقہ کے مقامی تاجرین کے علاوہ فٹ پاتھ کے تاجرین کی جانب سے بھی ان بیانرس کی تنصیب پر شدید اعتراض کیا جارہا ہے۔ محکمہ پولیس کے ذمہ دار عہدیداروں کو چاہئے کہ وہ فوری طور پر ان بیانرس کو ہٹاتے ہوئے مخصوص طبقہ کی دلآزاری سے اجتناب کرے۔

TOPPOPULARRECENT