Friday , December 15 2017
Home / ہندوستان / سالیسیٹر جنرل رنجیت کمار مستعفی

سالیسیٹر جنرل رنجیت کمار مستعفی

نئی دہلی ۔ 20 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) سینئر ایڈوکیٹ رنجیت کمار نے جنہیں این ڈی اے حکومت نے 7 جون 2014ء کو سالیسیٹر جنرل آف انڈیا مقرر کیا تھا، آج شخصی وجوہات بتاتے ہوئے اپنے عہدہ سے استعفیٰ دیدیا۔ رنجیت کمار نے جو ملک کے دوسرے سب سے بڑے قانونی فاسر کے عہدہ پر تین سال تک فائز رہے۔ سپریم کورٹ میں نوٹ بندی اور آلودگی کے بشمول کئی اہم مقدمات میں مرکز کی نمائندگی کی تھی۔ مکل روہتگی کے بعد رنجیت کمار ملک کے دوسرے سب سے اہم قانونی افسر ہیں جو اپنے عہدہ سے مستعفی ہوئے ہیں۔ روہتگی اس سال جون میں سالیسیٹر جنرل کے عہدہ سے مستعفی ہوگئے تھے۔ رنجیت کمار دستوری قوانین کے ماہر ہیں۔ انہوں نے اس مسئلہ پر فیصلہ کرنے میں عدالت عظمیٰ کی اعانت کی تھی کہ آیا کوئی ریاستی حکومت کسی مجرم کی سزائے موت کو معافی دے سکتی ہے جس کے مقدمہ کی تحقیقات سی بی آئی اور دیگر مرکزی اداروں کی طرف سے کی گئی تھی۔ واضح رہیکہ سابق وزیراعظم راجیو گاندھی کے قاتلوں کو رہا کرنے حکومت ٹاملناڈو کے فیصلے کے بعد یہ مسئلہ پیدا ہوا تھا۔ رنجیت کمار نے اپنے مستعفی ہونے کی توثیق کی ہے۔ ان کے قریبی ذرائع نے کہا کہ شخصی وجوہات پر یہ فیصلہ کیا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT