Wednesday , December 19 2018

سدارامیا حکومت ’’ہندو دشمن‘‘ : قومی صدر بی جے پی

چتردرگ (کرناٹک) ۔ 10 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس کی کرناٹک حکومت کو ’’ہندو دشمن‘‘ قرار دیتے ہوئے قومی صدر بی جے پی امیت شاہ نے الزام عائد کیا کہ بی جے پی اور آر ایس ایس کارکنوں پر مظالم ڈھائے جارہے ہیں۔ گذشتہ تین سال کے دوران ریاست میں 20 کارکن ہلاک کئے گئے ہیں۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ سدارامیا حکومت ووٹ بینک سیاست پر عمل پیرا ہو اور ایس ڈی پی آئی کارکنوں کے خلاف مقدمات سے دستبرداری اختیار کرچکی ہے، حالانکہ یہ تنظیم قوم دشمن سرگرمیوں میں ملوث ہے۔ امیت شاہ نے مطالبہ کیا کہ سدارامیا مودی حکومت کی جانب سے ترقیات کیلئے ریاست کو فراہم کردہ 3 لاکھ کروڑ روپئے کا حساب دیں۔ انہوں نے ایک جلسہ عام سے ہولال چیری میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ گذشتہ تین سال کے دوران 20 بی جے پی اور آر ایس ایس کارکن ہلاک ہوچکے ہیں اور حکومت مقدمات کی مناسب انداز میں تحقیقات نہیں کررہی ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ پارٹی کارکنوں پر مظالم بند کئے جائیں کیونکہ بی جے پی برسراقتدار آنے پر ان مقدمات کی دوبارہ تحقیقات کروائی جائیں گی اور خاطیوں کو جیل میں ڈال دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ یہ ہندو دشمن ریاست ووٹ بینک کی سیاست پر عمل پیرا ہے حالانکہ یہ یہ بات ثابت ہوچکی ہیکہ ایس ڈی پی آئی قتل کی وارداتوں میں ملوث ہے لیکن ان کے خلاف مقدمات سے دستبرداری اختیار کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا، پاپولر فرنٹ آف انڈیا کا سیاسی شعبہ ہے۔ انسداد دہشت گردی تحقیقاتی محکمہ این آئی اے نے دعویٰ کیا ہیکہ ایس ڈی پی آئی اور پی ایف آئی کے کئی کارکن دہشت گردی سے مربوط مقدمات میں ملوث ہیں ۔ آئندہ اسمبلی انتخابات کے پیش نظر قومی صدر بی جے پی نے حکومت کرناٹک سے الزامات کا جواب طلب کیا۔

TOPPOPULARRECENT