Thursday , September 20 2018
Home / شہر کی خبریں / سروے میں حصہ لینے عوام میں زبردست جوش و خروش

سروے میں حصہ لینے عوام میں زبردست جوش و خروش

اپوزیشن کی شدید مخالفت کے باوجود سروے کامیاب ، ہریش راؤ کا ردعمل

اپوزیشن کی شدید مخالفت کے باوجود سروے کامیاب ، ہریش راؤ کا ردعمل
حیدرآباد۔/19اگسٹ، ( سیاست نیوز) وزیر آبپاشی ہریش راؤ نے کہا کہ اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے تلنگانہ حکومت کے جامع سماجی سروے کے خلاف مہم کے باوجود سروے میں حصہ لینے کیلئے عوام میں زبردست جوش و خروش دیکھا گیا ہے۔ ہریش راؤ نے آج اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ سروے کے موقع پر نہ صرف حیدرآباد بلکہ اضلاع میں عوام کے درمیان تہوار کا ماحول دیکھا گیا اور لوگ سروے میں شامل عہدیداروں کا بے چینی سے انتظار کرتے دیکھے گئے۔ ہریش راؤ نے آج اپنے ارکان خاندان کے ساتھ میدک ضلع کے سدی پیٹ میں سروے میں حصہ لیا اور عہدیداروں کو اپنے افراد خاندان کے بارے میں تفصیلات فراہم کی۔ انہوں نے سدی پیٹ کے علاوہ ضلع کے دیگر علاقوں کا دورہ کرتے ہوئے سروے کے کام کا جائزہ لیا اور عہدیداروں سے معلومات حاصل کی۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس کرپشن اور بے قاعدگیوں سے پاک نظم و نسق کی فراہمی کا عہد کرچکی ہے اور اس کے لئے وہ اپوزیشن کی تنقیدوں کی پرواہ کئے بغیر اپنی کارکردگی جاری رکھے گی۔ انہوں نے کہا کہ چندر شیکھر راؤ کی زیر قیادت حکومت کسی سے خوفزدہ نہیں ہوگی اور عوام سے جو وعدے کئے گئے ہیں ان کی تکمیل کیلئے ہر ممکن اقدامات کئے جائیں گے۔ جامع سماجی سروے کی مکمل تائید کرتے ہوئے ہریش راؤ نے کہا کہ یہ سروے دراصل عوام کے مفاد میں ہے اور اس سے فلاحی اسکیمات پر عمل آوری میں نہ صرف حکومت کو مدد ملے گی بلکہ اسے حقیقی مستحقین کے انتخاب میں سہولت ہوگی۔ ہریش راؤ نے سروے کے سلسلہ میں اپوزیشن کی جانب سے حکومت پر کی جارہی تنقیدوں کو یہ کہتے ہوئے مسترد کردیا کہ اپوزیشن جماعتیں غریب عوام کی بھلائی نہیں چاہتیں۔ انہوں نے کہا کہ اس سروے کی بنیاد پر حکومت مستحق افراد کیلئے مختلف نئی اسکیمات کا آغاز کرسکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عوام میں سروے سے متعلق دلچسپی کا یہ عالم تھا کہ 10اضلاع میں لوگ اپنے گھروں پر موجود رہے اور تمام دیگر سرگرمیوں کو ترک کرتے ہوئے سروے میں حصہ لیا اور اسے کامیاب بنایا۔ سروے کی کامیابی کا دعویٰ کرتے ہوئے ہریش راؤ نے کہا کہ اس سروے کی بنیاد پر ہی فلاحی اسکیمات مدون کی جائیں گی۔ انہوں نے سروے کی کامیابی کیلئے عوام اور عہدیداروں سے اظہار تشکر کیا۔انہوں نے کہا کہ سروے کے سلسلہ میں تجارتی اداروں نے اپنی سرگرمیاں بند کرتے ہوئے حکومت سے تعاون کیا ہے جس کے لئے وہ اظہار تشکر کرتے ہیں۔ ہریش راؤ نے کہا کہ سروے کے دوران دارالحکومت حیدرآباد کی سڑکیں سنسان نظر آرہی تھیں اور عوام ہر جگہ سروے کے کام میں مصروف دیکھے گئے۔ ہریش راؤ نے کہا کہ ان کی حکومت صرف باتیں اور اعلانات نہیں کرتی بلکہ ان پر عمل آوری پر یقین رکھتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت کا ہر اقدام شفافیت پر مبنی ہوگا۔ ملک کی کسی بھی ریاست میں مارکٹ کمیٹی صدورنشین کے عہدوں میں دلتوں کو تحفظات فراہم نہیں کئے گئے لیکن تلنگانہ حکومت نے 22فیصد تحفظات کی فراہمی کا اعلان کرتے ہوئے کارنامہ انجام دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سے مارکٹ کمیٹی کے عہدوں پر دلتوں کی نمائندگی میں اضافہ ہوگا۔ ہریش راؤ نے کہا کہ اپوزیشن جماعتوں کو یہ خوف لاحق ہوچکا ہے کہ سرکاری اسکیمات پر عمل آوری کی صورت میں ان کا سیاسی مستقبل تاریک ہوجائے گا۔ انہوں نے اپوزیشن کو مشورہ دیا کہ وہ حکومت کو تعمیری تجاویز پیش کرنے کے ساتھ ساتھ حکومت کے اچھے کاموں کی ستائش کریں۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن جماعتوں کو حکومت کے فلاحی و ترقیاتی کاموں میں شانہ بہ شانہ شامل ہونا چاہیئے کیونکہ نئی ریاست تلنگانہ کی ہمہ جہتی ترقی صرف ٹی آر ایس نہیں بلکہ ہر شخص کی ذمہ داری ہے۔

TOPPOPULARRECENT