Sunday , November 18 2018
Home / اضلاع کی خبریں / سرپور ٹاؤن میں مسلمانوں کے ووٹ فیصلہ کن

سرپور ٹاؤن میں مسلمانوں کے ووٹ فیصلہ کن

ٹی آر ایس اور کانگریس پارٹی میں کانٹے کے مقابلہ کا امکان
کاغذ نگر۔/8نومبر، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ضلع کمرم بھیم آصف آباد میں دو اسمبلی حلقوں میں سرپور ٹاؤن حلقہ کے 7 منڈلوں میں سیاسی ہلچل میں اضافہ ہوگیا ہے۔ اسمبلی حلقہ سرپور ٹاؤن میں جملہ ووٹرس 187587 ہیں۔ ان میں لگ بھگ مسلمانوں کے 20 تا30 ہزار ووٹ ہیں اور حلقہ اسمبلی سرپور ٹاؤن میں اتحادکے ساتھ ووٹوں کا استعمال کیا گیا تو حلقہ میں مسلمانوں کے ووٹ فیصلہ کن ثابت ہوں گے۔ جیسا کہ حلقہ اسمبلی سرپور ٹاؤن کے ساتھ منڈلوں میں ٹی آر ایس پارٹی کی جانب سے سابق رکن اسمبلی سرپور ٹاؤن کے ساتھ منڈلوں میں ٹی آر ایس پارٹی کی جانب سے سابق رکن اسمبلی کونیرو کونپا بغیر وقت ضائع کرتے ہوئے حلقہ کے گاؤں اور گلی تک ٹی آر ایس پارٹی کی مہم میں شرکت کرتے آرہے ہیں اور دن رات محنت کرتے ہوئے ٹی آر ایس پارٹی کی کامیابی کیلئے ایڑی چوٹی کا زور لگانے میں مصروف دکھائی دے رہے ہیں اور گھر گھر مہم چلاتے ہوئے اپنی کامیابی کیلئے عوام سے اپیل کرتے آرہے ہیں۔ بی جے پی کی جانب سے ڈاکٹر کے سرینواس بھی تعلقہ کے تمام علاقوں کا دورہ کرتے ہوئے بی جے پی کے حق میں پیدل یاترا اور محلہ محلہ جاکر بی جے پی کے حق میں مہم چلارہے ہیں۔ کانگریس پارٹی کی جانب روی سرینواس اور ڈاکٹر ہریش بابو اپنے اپنے حامیوں کے ساتھ الگ الگ کانگریس پارٹی کیلئے مہم چلار ہے ہیں اور دونوں ہی کانگریس پارٹی سے ٹکٹ کی امید لگائے ہوئے ہیں اور پارٹی حکومت کی ناکامیوں کے بارے میں اور کانگریس پارٹی کے دورحکومت میں کئے گئے عوامی ترقیاتی کاموں کو عوام کے روبرو لے جاکر کانگریس پارٹی کے حق میں عوامی مہم چلارہے ہیں۔ ان کے علاوہ بی ایس پی پارٹی کی جانب سے آرسری ہری دلتوں کے ووٹوں کو بی ایس پی پارٹی کی طرف راغب کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ آزاد امیدوار کی حیثیت سے محمد جبار خان اور ایڈوکیٹ جی پنٹنا انتخابی مہم چلارہے ہیں۔ اس طرح سے حلقہ اسمبلی سرپور ٹاؤن میں مسلمانوں کے ووٹ کس کی طرف جاتے ہیں اس کی کامیابی یقینی ہوسکتی ہے۔ آخر میں کہا کہ حلقہ میں مسلمانوں کے ووٹ فیصلہ کن ثابت ہوں گے اور امید ظاہر کی جارہی ہے کہ کانگریس اور ٹی آر ایس میں اہم اور کانٹے کا مقابلہ ہونے کی امید ہے۔

TOPPOPULARRECENT