Friday , June 22 2018
Home / اضلاع کی خبریں / سرپور پیپر ملز کے احیاء کا مطالبہ

سرپور پیپر ملز کے احیاء کا مطالبہ

کاغذنگر /2 مارچ ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) مسٹر کڈیم سری ہری راؤ ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ نے کاغذنگر کا دورہ کیا ۔ ریلوے اسٹیشن کاغذنگر پر تلنگانہ راشٹرا سمیتی کے قائدین کے علاوہ مسٹر کونیرو کونپا رکن اسمبلی سرپور نے ان کا پرتپاک استقبال کیا ۔ انہوں نے اکیسویں صدی گروکل کالج کے معائنہ کے بعد کاغذنگر کے گورنمنٹ جونئیر کالج کا معائنہ کیا او

کاغذنگر /2 مارچ ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) مسٹر کڈیم سری ہری راؤ ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ نے کاغذنگر کا دورہ کیا ۔ ریلوے اسٹیشن کاغذنگر پر تلنگانہ راشٹرا سمیتی کے قائدین کے علاوہ مسٹر کونیرو کونپا رکن اسمبلی سرپور نے ان کا پرتپاک استقبال کیا ۔ انہوں نے اکیسویں صدی گروکل کالج کے معائنہ کے بعد کاغذنگر کے گورنمنٹ جونئیر کالج کا معائنہ کیا او رکالج کی خستہ حالت دیکھ کر تعجب کیا ۔ انہوں نے کالج کے چار کمروں کی تعمیر کیلئے پہلے مرحلے میں 50 لاکھ روپئے کی منظوری کا اعلان کیا اور دوسرے مرحلے میں مزید 50 لاکھ روپئے کی منظوری کا تیقن دیا ۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ گورنمنٹ جونئیر کالج کی سڑک کی مرمت کیلئے بھی موثر اقدامات کئے جائیں گے ۔ گورنمنٹ جونئیر کالج کی ڈیولپمنٹ کمیٹی کے اراکین جناب رفیع احمد صدر ، جناب محمد عارف الدین سکریٹری اور جناب سردار خان نائب صدر نے ڈپٹی چیف منسٹر مسٹر کڈیم سری ہری کا استقبال کیا اور گورنمنٹ جونئیر کالج کے دیرینہ مسائل کے تعلق سے واقف کروایا اور اردو میڈیم کے طلباء کے تعلیمی گروپس میں اضافہ کیلئے اپیل کی ۔ سرپور پیپر ملز کے اسٹاف اور ورکرس نے ڈپٹی چیف منسٹر سے ملاقات کرکے سرپور پیپرملز کے تعلق سے واقف کروایا اور انہیں ایک یادداشت پیش کی جس میں فیاکٹری کی کشادگی کے تعلق سے اپیل کی گئی ۔ انہوں نے مسٹر کڈیم سری ہری کو بتایا کہ مذکورہ فیاکٹری چھ ماہ کے عرصہ سے بند پڑی ہے ۔ ورکرس اور اسٹاف تنخواہوں سے محروم ہیں فاقہ کشی تک کی انہیں نوبت آگئی ہے ۔ فیاکٹری کی انتظامیہ فیاکٹری کی کشادگی میں دلچسپی نہیں دکھا رہی ہے ۔ اس فیاکٹری کی ورکرس یونین کے پریسیڈنٹ مسٹر نائینی نرسمہا ریڈی ہی ہیں جو تلنگانہ کے ہوم منسٹر ہیں ۔ وہ بھی فیاکٹری کی کشادگی میں دلچسپی نہیں لے رہے ہیں ۔ حالانکہ چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے وعدہ کیا تھا کہ نوتشکیل تلنگانہ ریاست میں کوئی بھی فیاکٹری بندن ہیں ہوگی وہ بیانات صرف کاغذی ہی رہے ۔ مسٹر کڈیم سری ہری راؤ نے تیقن دیا کہ وہ اس فیاکٹری کو بند ہونے نہیں دیں گے ۔ اس موقع پر SKE ڈگری کالج کی انتظامیہ نے بھی ایک یادداشت پیش کی جس میں یہ مطالبہ کیا گیا کہ اس خانگی کالج کو گورنمنٹ کالج میں تبدیل کردیا جائے ۔ اس موقع پر مسٹر جوگورامنا منسٹر ، مسٹر اندرا کرن ریڈی منسٹر اور شریمتی کووا لکشمی بھی مسٹر کڈیم سری ہری راؤ کے ہمراہ تھے ۔

TOPPOPULARRECENT