Thursday , December 14 2017
Home / اضلاع کی خبریں / سرپور پیپر ملز کے احیاء کے امکانات

سرپور پیپر ملز کے احیاء کے امکانات

کاغذ نگر /10 جنوری (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) سرپور پیپر ملز کا شمار ایشاء کی صف اول کی صنعتوں میں ہوتا ہے، لیکن چند ناگزیر حالات کی بناء پر یہ فیکٹری پندرہ ماہ سے بند پڑی ہے۔ فیکٹری انتظامیہ نے اب تک نہ تو اسے لاک آؤٹ قرار دیا اور نہ ہی لے آف کا اعلان کیا۔ فیکٹری کے مزدور اور اسٹاف کی پندرہ ماہ سے تنخواہ بھی نہیں دی گئی، جس کی وجہ سے مزدور فاقہ کشی کا شکار ہیں۔ کئی ریاستوں کے صنعت کاروں نے اس فیکٹری کی کشادگی کی کوشش کی، لیکن ناکام رہے۔ ہندوستان کی مشہور کمپنی آئی ٹی سی کے نمائندوں نے سرپور پیپر ملز کا معائنہ کیا اور مسلسل تین دنوں تک قیام کرکے فیکٹری میں موجود آٹھ عدد کاغذ سازی کی مشنریز کی جانچ کی اور فیکٹری میں کام کرنے والے انجینئرس اور ٹکنیکل اسٹاف سے ملاقات کرکے تمام مشنریز کی صورت حال کا اندازہ لگایا۔ ان کے ہمراہ مسٹر کونیرو کونپا رکن اسمبلی سرپور کے علاوہ حکومت کی جانب سے وزارت کا صنعت کا عملہ بھی موجود تھا۔ آئی ٹی سی کمپنی کے نمائندے فیکٹری کے تعلق سے اعلی عہدہ داروں کو رپورٹ پیش کریں گے۔ اگر یہ فیکٹری ان کے لئے منفعت بخش ثابت ہوسکتی ہے تو وہ فیکٹری کے احیاء کے لئے راضی ہو جائیں گے۔ مسٹر کونیرو کونپا نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ مذکورہ فیکٹری کے احیاء کے امکانات دکھائی دے رہے ہیں، اس طرح فیکٹری کے مزدوروں اور اسٹاف کا مستقبل تابناک دکھائی دے رہا ہے۔ ریاستی حکومت بھی اس فیکٹری کے احیاء میں دلچسپی رکھتی ہے اور بینک بھی دست تعاون دراز کرنے کے موقف میں ہیں۔ ان حالات میں فیکٹری کے مزدوروں اور اسٹاف کے لئے امید کی کرن دکھائی دے رہی ہے۔ واضح رہے کہ مذکورہ فیکٹری کے انتظامیہ نے بینکوں سے قرض حاصل کیا تھا، لیکن وہ قرض ادا کرنے سے قاصر رہے، اسی لئے بینک کے عہدہ داروں نے فیکٹری کو اپنے قبضہ میں لے لیا۔ اگر کوئی سرمایہ دار یا صنعت کار فیکٹری چلانے کے لئے تیار ہے تو نہ صرف ریاستی حکومت بلکہ بینک کے اعلی عہدہ دار بھی تعاون کے لئے آگے بڑھیں گے اور فیکٹری کا احیاء ممکن ہوسکے گا۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ آئی ٹی سی کمپنی کے عہدہ دار کیا گل کھلاتے ہیں۔ یہ بات دعویٰ کے ساتھ کہی جاسکتی ہے کہ اگر آئی ٹی سی کمپنی کے عہدہ دار اس فیکٹری کو چلانے سے انکار کردیں تو کاغذ نگر ویران ہو جائے گا۔ فیکٹری کے تمام مزدور اور اسٹاف کاغذ نگر سے تلاش معاش میں نقل مقام کریں گے اور کاغذ نگر پہلے ہی کی طرح کوتہ پیٹ بن جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT