Sunday , June 24 2018
Home / ہندوستان / سرکاری افسران کو آزادی اورا حترام کیساتھ کام کرنے دیا جائے

سرکاری افسران کو آزادی اورا حترام کیساتھ کام کرنے دیا جائے

دہلی کے آئی اے ایس افسران کے وفد سے راج ناتھ کی بات چیت، چیف سکریٹری کو زدوکوب پر اظہار افسوس
نئی دہلی 20 فروری (سیاست ڈاٹ کام) دہلی کے چیف سکریٹری پر حملہ اور زدوکوب پر برہم آئی اے ایس افسران دیگر عہدیداروں اور ماتحت کی خدمات کے ملازمین کے ایک وفد نے آج یہاں وزیرداخلہ راج ناتھ سنگھ سے ملاقات کی جنھوں نے کہاکہ سیول ملازمین کو کسی ڈر و خوف کے بغیر وقار اور احترام کے ساتھ کام کرنے دیا جانا چاہئے۔ دہلی کے چیف سکریٹری انشو پرکاش کو کل رات چیف منسٹر اروند کجریوال کی رہائش گاہ پر عام آدمی پارٹی (عاپ) کے چند ارکان اسمبلی کی طرف سے مبینہ زدوکوب کئے جانے کے ایک دن بعد اس وفد نے مرکزی وزیرداخلہ سے یہ ملاقات کی ہے۔ سرکاری افسران کے وفد نے اس حملہ کو منظم و منصوبہ بند قرار دیا ہے۔ راج ناتھ سنگھ نے ٹوئیٹر پر لکھا کہ ’’حکومت دہلی کے چیف سکریٹری کے ساتھ پیش آئے واقعہ پر مجھے کافی دُکھ ہوا ہے۔ سیول ملازمین کو کسی ڈر و خوف کے بغیر مکمل وقار اور احترام کے ساتھ کام کرنے کی اجازت دی جانی چاہئے‘‘۔ وزیرداخلہ نے کہاکہ وزارت داخلہ نے دہلی کے لیفٹننٹ گورنر سے تفصیلی رپورٹ طلب کی ہے اور ’انصاف کیا جائے گا‘۔ راج ناتھ سنگھ نے کہاکہ آئی اے ایس، ڈینکس اور ماتحت کی خدمات سے وابستہ ملازمین کے ایک وفد نے انھیں موجودہ صورتحال سے واقف کروایا۔ اجلاس میں موجود ایک اعلیٰ سرکاری عہدیدار نے اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی خواہش کے ساتھ کہاکہ اس وفد نے جس میں خود چیف سکریٹری بھی شامل تھے وزیرداخلہ کو مطلع کیا کہ دہلی انتظامیہ کے سربراہ کے سر پر گھونسوں کی شکل میں جسمانی حملہ اور زدکوب نہ صرف افسوسناک ہے بلکہ اُن کی جسمانی حفاظت اور زندگی کے لئے خطرہ ہے۔ آئی اے ایس اسوسی ایشن دہلی کی سکریٹری منیشا سکسینہ نے کہاکہ چیف سکریٹری کی توہین کی گئی ہے اور وہ محض معذرت خواہی قبول نہیں کریں گے بلکہ (حملہ آوروں کے خلاف) کارروائی چاہتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT