Monday , September 24 2018
Home / اضلاع کی خبریں / سرکاری بیمہ اسکیم غریبوں کیلئے نہایت نفع بخش

سرکاری بیمہ اسکیم غریبوں کیلئے نہایت نفع بخش

یلاریڈی /18 فروری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) حادثات میں معذور ہونے اور فوت ہونے والوں کے خاندان کیلئے ناقابل تلافی نقصان کوئی پورا نہیں کرسکتا لیکن مستقبل کیلئے امید کی کرن کا کام بیمہ کے ذریعہ کسی قدر ممکن ضرور ہے ۔ مختصر ادائیگی پیریم رقم سے زیادہ فائدے دینے والی پالیسیاں اندرا کرانتی پدم IKP کے ذریعہ چلائے جارہے ہیں جو غریب خاندانوں کیل

یلاریڈی /18 فروری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) حادثات میں معذور ہونے اور فوت ہونے والوں کے خاندان کیلئے ناقابل تلافی نقصان کوئی پورا نہیں کرسکتا لیکن مستقبل کیلئے امید کی کرن کا کام بیمہ کے ذریعہ کسی قدر ممکن ضرور ہے ۔ مختصر ادائیگی پیریم رقم سے زیادہ فائدے دینے والی پالیسیاں اندرا کرانتی پدم IKP کے ذریعہ چلائے جارہے ہیں جو غریب خاندانوں کیلئے ثمر آور ثابت ہو رہے ہیں ۔ ناگہانی حالات میں حادثہ سے معذور ہونے پر خاندان کی کفالت مختلف اسکیمات سہارا ثابت ہو رہے ہیں ۔ ماضی میں غریب عوام کیلئے انشورنس اسکیمات میسر نہیں ہوا کرتے تھے ۔ جس پر خاص توجہ مبذول کرتے ہوئے حکومت نے مختلف بیمہ اسکیمات روبہ عمل لاتے ہوئے IKP کے ذریعہ اسے چلایا جارہا ہے ۔ حادثات میں خاندان کا فرد فوت ہونے پر اس خاندان کو بیمہ رقم کچھ حد تک راحت پہونچانے کام کر رہی ہے ۔ یہ اسکیم سال 2009 میں آغاز کی گئی جس کا نام ابھئے ہستم ہے ۔ اس کے ذریعہ بیمہ کروانے کیلئے ڈاکرا گروپ میں رکنیت ضروری ہے ۔ رکن کی عمر 18 سال سے 60 سال کے درمیان ہو ۔ اس اسکیم میں ضلع بھر سے 204834 افراد ارکان ہیں ۔ ورنی ایس آر ابھئے ہستم میں رکنیت پانے والے ارکان روزآنہ ایک روپیہ یعنی سالانہ 365 روپئے جمع کریں تو اس میں مکمل رقم حکومت ادا کرتے ہوئے بیمہ سہولت فراہم کرتی ہے ۔ وظیفہ لیتے ہوئے اگر فوت ہوں تو رکن کی جانب سے ادا کردہ مکمل رقم واپس اس کے افراد خاندان کو لوٹا دی جاتی ہے ۔ عام موت پر 30 ہزار روپئے اور اداکی گئی جملہ رقم بھی واپس کردی جاتی ہے ۔ اگر موت حادثاتی پیش آئے تو 75 ہزار روپئے کے ساتھ جمع کی گئی رقم بھی اس کے خاندان کو ادا کردی جاتی ہے ۔ گذشتہ اکٹوبر تک 60 سال مکل کرنے والوں کو ماہانہ 500 روپئے وظائف دئے جاتے تھے لیکن تلنگانہ سرکار نے اس پر روک لگادی ہے ۔ ابھئے ہستم میں رکن کے Nominee کو بیمہ رقم ادائیگی کی سہولت حکومت نے گذشتہ نومبر میں فراہم کی ہے ۔ سرویس چارج کے تحت صرف رکن پندرہ روپئے ادا کرنے پر حادثاتی موت پر ایک لاکھ روپئے اور اگر حادثہ میں معذور ہوں تو 50 ہزار روپئے ادا کئے جاتے ہیں ۔ منڈل ناگی ریڈی پیٹ اندرا کرانتی پدم APM مسٹر مہیش کمار نے نمائندہ سیاست محمد غوث علی خاموش کو مزید بتایا کہ سال 2008 میں عام آدمی بیمہ یوجنا اسکیم کا آغاز کیا گیا ۔ اس کیلئے راشن کارڈ عام آدمی بیمہ یوجنا اسکیم کا آغاز کیا گیا ۔ اس کیلئے راشن کارڈ رکھنے والے 18 سال سے 59 سال درمیان عمر رکھنے والے اسکیم بیمہ کیلئے اہل ہوں گے ۔ اس میں ممبر بننے والے کو ہر سال صرف پندرہ روپئے سرویس چارج کے تحت ادا کرنا ہوتا ہے اور ممبر کے نام پر سرکار ہر سال 160 روپئے ادا کرکے بیمہ سہولت مہیا کرتی ہے ۔ اس میں بھی عام موت پر 30 ہزار روپئے اور حادثاتی موت پر 75 ہزار روپئے ادا کئے جاتے ہیں ۔ ضلع بھر میں اس اسکیم سے 109625 افراد وابستہ ہیں ۔ جناشری بیمہ یوجنا یہ اسکیم سال 2012 میں آغاز کی گئی ۔ ڈاکرا گروپ میں رکنیت رکھتے ہوئے 18 سال سے 59 سال کے درمیان والے خواتین اہلیت رکھتے ہیں ۔ اس اسکیم سے استفادہ کیلئے ہر سال 100 روپئے کے ساتھ سرویس چارج کے تحت صرف پندرہ روپئے ادا کرنے پر اس اسکیم میں بھی عام موت پر 30 ہزار روپئے اور حادثاتی موت پر 75 ہزار روپئے بیمہ کے ذریعہ حاصل ہوتے ہیں۔ اب تک ضلع بھر میں 57254 افراد جنا شری بیمہ یوجنا میں داخل ہوئے ہیں ۔ مسٹر مہیش کمار APM نے مزید کہا کہ حکومت نے معذورین کیلئے بھی خصوصی بیمہ اسکیم تشکیل دے رہی ہے ۔ یہ اسکیم معذورین کی جنا شری بیمہ یوجنا اسکیم ہے ۔ یہ سال 2010 میں آغاز کی گئی ۔ 18 سال سے 59 سال عمر والے معذور افراد اس اسکیم کیلئے اہل ہوں گے ۔ معذورین کو اسکیم میں سالانہ 175 روپئے پریمیم کے ساتھ پندرہ روپئے سرویس چارجس ادا کرنے ہوتے ہیں ۔ جس میں عام موت پر 30 ہزار روپئے اور حادثاتی موت پر 75 ہزار روپئے رقم ادا کی جاتی ہے ۔ ضلع بھر میں اس اسکیم کے تحت 4519 افراد ارکان شامل ہیں ۔ اس کے ساتھ ساتھ IKP کے ذریعہ عمل میں لائے گئے تمام بیمہ اسکیمات میں شامل ہونے والے ارکان کے بچوں کو اسکالرشپ پانے کی بھی سہولت فراہم ہے۔ ابھئے ہستم ، جناشری بیمہ ، عام آدمی بیمہ یوجنا معذورین جناشری بیمہ اسکیم میں شامل تمام ارکان کے بچوں کو چار سال تک اسکالرشپ بھی دیا جاتا ہے ۔ نویں جماعت دسویں جماعت اور انٹرمیڈیٹ کے دو سال ہر طالب علم کو 1200/- روپئے سالانہ اسکالرشپ دیا جاتا ہے ۔ سال 2013-14 میں ضلع بھر سے 51836 طلباء نے ا سکالرشپ حاصل کی ۔ مسٹر مہیش کمار نے IKP کی زیر نگرانی چلائے جارہے بیمہ اسکیمات سے ہر غریب عوام کو استفادہ کرنے کی خواہش کی ۔ چھوٹی سی رقم ادا کرنے پر جب سرکار سے زیادہ فائدہ ہوتا ہے تو کیوں نہ ہر مستحق اس سے استفادہ کرے ۔ سرکاری اسکیمات سے زیادہ تر عوام واقفیت نہیں رکھتے جس سے انہیں استفادہ کرنے کا موقع نصیب نہیں ہوتا ۔ جبکہ ہر غریب خاندانوں کو سرکاری اسکیمات سے مکمل فائدہ حاصل کرنا ان کا حق ہے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT