Thursday , December 14 2017
Home / شہر کی خبریں / سرکاری دواخانوں میں زچگی کے رجحان میں اضافہ

سرکاری دواخانوں میں زچگی کے رجحان میں اضافہ

حکومت کے اقدامات ثمر آور ۔ وزیر صحت لکشما ریڈی کا بیان
حیدرآباد۔ 3 اگست (سیاست نیوز) وزیر صحت ڈاکٹر لکشما ریڈی نے کہا کہ سرکاری ہاسپٹلس میں زچگی کرانے کی شرح 41% تک پہونچ گئی ہے۔ سب سے زیادہ عادل آباد و سب سے کم میڑچل کے ہاسپٹلس میں زچگیاں ہو رہی ہیں۔ وزیر صحت نے آج کے سی آر کٹ اسکیم کا جائزہ لیتے ہوئے کہا کہ حکومت کی دلچسپی سے صرف 6 ماہ میں سرکاری ہاسپٹلس میں زچگی کے رجحان میں اضافہ ہوا ہے۔ 6 ماہ قبل تک سرکاری ہاسپٹل میں زچگی کرانے کی شرح 30% تھی جو اب 41% تک پہنچ گئی ہے۔ عادل آباد کے سرکاری ہاسپٹلس میں 82% خواتین زچگی کرا رہی ہیں جبکہ میڑچل میں 5% خواتین سرکاری ہاسپٹلس میں زچگی کرا رہی ہیں۔ لکشما ریڈی نے ضلع میڑچل کے ہاسپٹلس میں تمام بنیادی سہولتیں فراہم کرنے اور طبی عملہ کی مکمل خدمات فراہم کرنے حکام کو ہدایت دی۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر نے جو ہدایت دی ہے اس پر طبی عملہ عمل آوری کرکے غیرضروری آپریشن سے گریز کر رہا ہے وہ قابل ستائش ہیں۔کے سی آر کٹس اسکیم کو متعارف کرانے کے بعد سرکاری ہاسپٹلس میں ڈیلوریز کا رجحان تیزی سے بڑھا ہے۔ انہوں نے ڈسٹرکٹ میڈیکل اینڈ ہیلتھ آفیسر کو مشورہ دیا کہ وہ سرکاری ہاسپٹلس میں مزید سہولتیں بڑھائے، طبی عملہ کی قلت کو دور کرکے 50% فیصد ڈیلوریز کے نشانے کو عبور کریں۔ لکشما ریڈی نے کہا کہ سرکاری ہاسپٹلس میں زچگی کرانے کے معاملے میں دوسرے نمبر پر حیدرآباد ہے جہاں پر 78%، ورنگل اربن تیسرے نمبر پر جہاں 76% اور محبوب نگر چوتھے مقام پر ہے جہاں 58% ڈیلوریزسرکاری ہاسپٹل میں کرائی گئی ہیں۔

 

TOPPOPULARRECENT