Friday , September 21 2018
Home / شہر کی خبریں / سرکاری ملازمین کیخلاف اے سی بی کے کیسیس کی یکسوئی پرزور

سرکاری ملازمین کیخلاف اے سی بی کے کیسیس کی یکسوئی پرزور

خصوصی جج کے تقرر پر زور ، سرکاری ملازمین تنظیموں کا مطالبہ

حیدرآباد ۔20 جنوری (سیاست نیوز) تلنگانہ میں مبینہ بے قاعدگیوں، کرپشن اور غیرمعلنہ اثاثہ جات اور واقعات میں ملوث پائے جانے والے سرکاری ملازمین کے خلاف محکمہ جات اینٹی کرپشن بیورو، ویجلنس انفورسمنٹ کی جانب سے درج کردہ کیسیس کی تحقیقات برسہابرس گزر جانے کے باوجود مکمل نہیں ہو پارہی ہیں۔ فی الوقت تلنگانہ میں سرکاری ملازمین کے خلاف 600 کیسیس کی تحقیقات زیرالتواء ہیں۔ ان کیسیس کے منجملہ 400 زیرالتواء کیسیس متحدہ ریاست آندھراپردیش میں اور ماباقی 200 کیسیس علحدہ ریاست تلنگانہ کی تشکیل کے بعد درج کردہ ہیں۔ سرکاری ذرائع نے یہ بات بتائی اور کہا کہ درحقیقت سرکاری ملازمین کے خلاف رشوت حاصل کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑے جانے والے اور غیرمعلنہ آمدنی و اثاثہ جات کے کیسیس کی مکمل تحقیقات کو اندرون دو سال مکمل کرلیا جانا چاہئے لیکن برسہابرس ہوجانے کے باوجود درج کردہ کیسیس کی یکسوئی نہیں ہورہی ہے۔ تاہم کئی ایسے ملازمین ہیں جن کے کیسیس ایک طویل مدت سے زیرالتواء ہیں لیکن ملزمین حکومت پر دباؤ ڈالواتے ہوئے اثرورسوخ کے ذریعہ اندرون دو سال کیسیس کو زیرالتواء رکھتے ہوئے ڈیوٹی پر رجوع ہورہے ہیں لیکن کئی ایک ایسے سرکاری ملازمین ہیں جن کے کوئی ’’گارڈ فادر‘‘ نہیں رہتے وہ ملازمین خدمات سے معطلی کی سزاء بھگت رہے ہیں جس کی وجہ سے ایسے سرکاری ملازمین کئی ایک مالی مسائل و مشکلات سے دوچار ہیں۔ اسی دوران تلنگانہ سرکاری ملازمین تنظیموں (یونینوں) نے طویل عرصہ سے سرکاری ملازمین کے زیرالتواء اے سی بی کیسیس، ویجلنس، انفورسمنٹ کیسیس کی عاجلانہ یکسوئی کیلئے ضروری رہنمایانہ خطوط مرتب کرکے ایک برسرخدمت سینئر جج کے ذریعہ کمیشن کا تقرر عمل میں لانے کا چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر کے چندرشیکھر راؤ سے مطالبہ کیا تاکہ مالی مسائل و مشکلات سے دوچار معطل شدہ ملازمین کو راحت حاصل ہوسکے۔

TOPPOPULARRECENT