Saturday , December 16 2017
Home / کھیل کی خبریں / سرینا کو یو ایس اوپن سیمی فائنل میں پلسکوا نے ہرا دیا، کربر عالمی نمبر 1

سرینا کو یو ایس اوپن سیمی فائنل میں پلسکوا نے ہرا دیا، کربر عالمی نمبر 1

نیویارک ، 9 سپٹمبر (سیاست ڈاٹ کام) یو ایس اوپن سیمی فائنل میں کیرولینا پلسکوا نے عالمی نمبر 1 سرینا ولیمز کو غیرمتوقع شکست دے کر 23واں گرانڈ سلام جیتنے کا خواب چکنا چور کردیا۔ دسویں سیڈ پلسکوا نے 34 سالہ امریکی حریف کے خلاف عمدہ کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے پہلا سٹ 6-2 سے جیت کر شائقین سے خوب داد وصول کی۔ جمہوریہ چیک کی کھلاڑی نے اپنی عمدہ کارکردگی کا سلسلہ جاری رکھا اور دوسرے سٹ میں 7-6 سے کامیابی کے ذریعے سرینا کو سال کے آخری گرانڈ سلام سے باہر کردیا۔ اس شکست کے ساتھ ہی سرینا عالمی نمبر 1 کے منصب سے بھی محروم ہو گئی جہاں وہ 187 ہفتوں تک اس پوزیشن پر موجود رہیں۔ عالمی نمبر ایک سرینا پرامید تھیں کہ وہ یو ایس اوپن میں فتح کے ساتھ کریئر میں 23 واں گرانڈ سلام مقابلہ جیت کر نیا عالمی ریکارڈ قائم کریں گی لیکن ایسا نہیں ہو پایا۔ اس وقت وہ سب سے زیادہ گرانڈ سلام جیتنے کے اعزاز میں جرمنی کی سابق ٹینس اسٹار سٹیفی گراف کے برابر ہیں جنھوں نے 22 مقابلے جیتے تھے۔ پلسکوا کا فائنل میں مقابلہ نئی عالمی نمبر 1 انجلیک کربر سے ہو گا

 

جنہوں نے کیرولین ووزنیاکی کو سیدھے سٹوں میں 6-4، 6-3 سے زیر کیا۔ پلسکوا پہلی مرتبہ کسی گرانڈ سلام کے فائنل میں پہنچی ہیں لیکن آسٹریلین اوپن چمپئن کربر کا یہ اِس سال تیسرا فائنل ہے۔ انہیں ومبلڈن میں سرینا کے ہاتھوں شکست کا منہ دیکھنا پڑا تھا۔ گزشتہ سال بھی یو ایس اوپن سیمی فائنل میں شکست سے دوچار ہونے والی سرینا نے انکشاف کیا کہ وہ سیمی فائنل سے قبل گھٹنے کی انجری کا شکار ہو گئی تھی۔ انہوں نے کہا کہ ’’اسی وجہ سے میں اپنے کھیل پر توجہ مرکوز نہیں رکھ سکی، میں نے وہ غلطیاں کیں جو کبھی نہیں کرتی ہوں اور بہت سے آسان شاٹ غلط کھیل گئی‘‘۔ 1993ء کے بعد یو ایس اوپن فائنل میں پہنچنے والی جمہوریہ چیک کی پہلی خاتون پلسکوا نے بھی اعتراف کیا کہ انہوں نے اس بات کا اندازہ لگا لیا تھا کہ اُن کی حریف انجری سے دوچار ہیں۔ ادھر عالمی نمبر ایک بننے والی کربر نے کہا کہ ’ورلڈ نمبر ون‘ بننا اُن کا خواب تھا اور ’’میں گزشتہ کچھ ہفتوں سے کوشش کر رہی تھی کہ اس بارے میں زیادہ نہ سوچوں، فائنل میں پہنچنا اور عالمی نمبر ایک بننا بہت ہی شاندار موقع ہے‘‘۔ کربر سابق اسٹار اسٹیفی گراف کے بعد یو ایس اوپن فائنل میں پہنچنے اور عالمی نمبر ایک بننے والی پہلی جرمن کھلاڑی ہے۔ چند روز قبل ہی سرینانے یو ایس اوپن میں یرسلوا شیوڈوا کو ہرانے کے بعد گرانڈ سلام مقابلے میں 308 ویں کامیابی کے بعد فتوحات کا نیا ریکارڈ قائم کیا تھا۔ ٹینس میں وہ معروف کھلاڑی روجر فیڈرر کی فتوحات کا بھی ریکارڈ توڑ چکی ہیں اور ٹینس کی دنیا میں وہ سب سے زیادہ میچ جیتنے والی کھلاڑی بن گئی ہیں۔ 22 گرانڈ سلام خطابات کے علاوہ سرینا نے اولمپکس میں بھی چار بار گولڈ میڈل حاصل کیا ہے اور تقریباً 80 لاکھ ڈالر کی انعامی رقم جیتی ہے۔

TOPPOPULARRECENT