Friday , July 20 2018
Home / ہندوستان / سرینگر میں احتجاجی مظاہروں کے پیش نظر پابندیاں نافذ

سرینگر میں احتجاجی مظاہروں کے پیش نظر پابندیاں نافذ

سری نگر۔ 13 فروری (سیاست ڈاٹ کام) کشمیر انتظامیہ نے منگل کے روز سری نگر کے آٹھ پولیس تھانوں کے تحت آنے والے علاقوں میں لوگوں کی آزادانہ نقل وحرکت پر رکاوٹیں عائد کر رکھیں۔ یہ رکاوٹ شہر کے کرن نگر میں جنگجوؤں اور سیکورٹی فورسز کے درمیان 12 فروری کی صبح چھڑنے والے تصادم کے پیش نظر عائد کی گئی تھیں۔ ظاہری طور پر انتظامیہ کو خدشہ تھا کہ شہر میں جنگجوؤں کی ہلاکت کے خلاف احتجاجی مظاہرے ہوسکتے ہیں۔سوشل میڈیا پر ویڈیوز کی اپ لوڈنگ کو روکنے کے لئے شہر میں تیز رفتار والی تھری جی اور فور جی موبائیل انٹرنیٹ خدمات پیر کو دوپہر کے وقت منقطع کی گئی تھیں۔ کشمیر انتظامیہ نے مزاحمتی قیادت سید علی شاہ گیلانی، میرواعظ مولوی عمر فاروق اور محمد یاسین ملک کو کسی بھی احتجاجی جلسہ، جلوس یا ریلی کا حصہ بننے سے روکنے کے لئے مسلسل تھانہ یا خانہ نظربند رکھا ہے ۔مسلح تصادم کے مقام کرن نگر کی طرف جانے والی تمام سڑکوں کو خاردار تار سے سیل رکھا گیا۔

TOPPOPULARRECENT