Friday , May 25 2018
Home / دنیا / سری لنکا میں تازہ تشدد ‘ مسلم ہوٹل پر حملہ

سری لنکا میں تازہ تشدد ‘ مسلم ہوٹل پر حملہ

کولمبو 11 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) سری لنکا میں ایک مسلمان کی ریسٹورنٹ پر حملہ کے بعد تازہ تشدد پھوٹ پڑا ہے ۔ ایک دن قبل ہی صدر میتری پالا سری سینا نے ایک کمیشن قائم کرتے ہوئے مخالف مسلم فسادات کی تحقیقات کا حکم دیا تھا ۔ یہ فسادات کینڈی ضلع میں ہو رہے ہیں جہاں مسلمانوں کے خلاف نفرت پھیلائی جا رہی ہے ۔ ان فسادات کے نتیجہ میں ملک میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے ۔ آج جس ریسٹورنٹ پر حملہ کیا گیا وہ پٹالم ضلع کے انماڈوا سٹی میں واقع ہے ۔ آج صبح کی اولین ساعتوں میں اسے حملہ کا نشانہ بنایا گیا حالانکہ یہاں پولیس فرقہ وارانہ جھڑپوں کے بعد سخت چوکسی برتنے کا دعوی کر رہی ہے ۔ گذشتہ دنوں ان جھڑپوں کا آغاز ہوا تھا جن میں دو افراد ہلاک ہوگئے تھے اور کئی گھروں ‘ دوکانوں اور مساجد کو نشانہ بنایا گیا تھا ۔ کہا گیا ہے کہ اس مسلم ریسٹورنٹ کو صبح چار بجے حملہ کا نشانہ بنایا گیا ۔ سارے سری لنکا میں ان جھڑپوں کے آغاز کے بعد سے کشیدگی برقرار ہے ۔ صدر سری سینا نے کل ایک سہ رکنی کمیشن تشکیل دیا تھا تاکہ کینڈی میں ان جھڑپوں کی تحقیقات کی جاسکیں۔ ان جھڑپوں کے سلسلہ میں جملہ 146 مشتبہ افراد کو گرفتار کیا گیا ہے ۔ اس دوران کینڈی کے وسطی صوبہ کے چیف منسٹر سرت اکنائیکے نے کہا کہ کل سے اسکولس دوبارہ کھل جائیں گے ۔ یہ اسکولس 7 مارچ سے بند ہیں۔ پولیس ترجمان نے بھی کل کہا تھا کہ کینڈی میں دوبارہ کرفیو نافذ نہیں کیا جائیگا کیونکہ یہاں صورتحال بہتر ہوئی ہے ۔ یہاں سوشیل میڈیا پر بھی حکام کی جانب سے امتناع عائد کردیا گیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT